کراچی : ملیر میں 15سالہ طالبہ کو زندہ جلا دیا گیا -
The news is by your side.

Advertisement

کراچی : ملیر میں 15سالہ طالبہ کو زندہ جلا دیا گیا

کراچی : ملیر میں جھلس کر زخمی ہونے والی پندرہ سالہ سدرہ اسپتال میں دم توڑ گئی۔

کراچی کے علاقے ملیر میں نامعلوم افراد نے گھر میں گھس کرپندرہ سالہ سدرہ کو زندہ جلادیا، جھلسی ہوئی سدرہ کو شدید زخمی حالت میں اسپتال منتقل کیا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئی۔

پولیس کا کہنا ہے لڑکی کی حادثاتی طور پر جلی یا جلائی گئی تحقیقات کررہے ہیں، اہلخانہ لڑکی کو تدفین کے لیے لاڑکانہ لے گئے ہیں، سو فیصد جلنے کا مطلب ہے باقاعدہ پکڑ کر جلایا گیا، بظاہرجلاتے وقت لڑکی کو مزاحمت بھی نہیں کرنے دی گئی۔

پولیس  نے بتایا کہ اہل خانہ اور رشتے داروں کے بدلتے بیانات مشکوک ہیں جبکہ اہل خانہ کی جانب سےواقعے کا مقدمہ درج نہیں کرایا گیا۔


مزید پڑھیں : ماں نے اپنی بیٹی کو زندہ جلادیا


سدرہ کے ماموں نے الزام عائد کیا ہے کہ لڑکی کو آگ لگائی گئی ہے، لڑکی کے والدین لاڑکانہ میں ہیں، لڑکی پڑھائی کی غرض سے ہمارے پاس رہی تھی، وہ حملہ آوروں کے بارے میں نہیں جانتے۔

لاڑکانہ سے تعلق رکھنے والی سدرہ پڑھائی کی غرض سے کراچی آئی ہوئی تھی۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں