The news is by your side.

Advertisement

کراچی کنگز کو شکست، اسلام آباد یونائیٹڈ کی فائنل تک رسائی

دبئی: اسلام آباد یونائیٹڈ کی ٹیم نے لک رونکی کی تیز ترین جارحانہ بیٹنگ کی بدولت کراچی کنگز کو 8 وکٹوں سے شکست دے کر پاکستان سپر لیگ کے تیسرے ایڈیشن کے فائنل تک رسائی حاصل کرلی۔

تفصیلات کے مطابق پی ایس ایل کے اکتیسویں اور پلے آف کے پہلے میچ میں پوائنٹس ٹیبل پر موجود پہلی اور دوسرے نمبروں کی ٹیموں میں فائنل تک رسائی حاصل کرنے کے لیے مقابلہ دبئی اسٹیڈیم ہوا۔

آئن مورگن نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ’آج کے میچ میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی، میچ جیت کر فائنل تک رسائی حاصل کرنے کی ہر ممکن کوشش کریں گے‘۔

کراچی کنگز نے بیٹنگ کا آغاز کیا تو خرم منظور اور ڈین لے میدان میں اترے، تیسرے اوور میں 17 رنز کے مجموعی اسکور پر عماد الیون کی دو وکٹیں گریں تاہم آئن مورگن اور ڈین لے نے گرتی ہوئی ٹیم کو تھوڑا سا سہارا فراہم کیا۔

بعد ازاں 46 کے مجموعی اسکور پر مورگن 21 رنز کی اننگز کھیل کر آؤٹ ہوئے، نئے آنے والے بیٹسمین کولن انگرام اور ڈین لے نے 59 گیندوں پر 82 رنز کی شاندار شراکت داری قائم کی اور اسکور کو 128 تک پہنچایا۔

کراچی کنگز کی پہلی اور دوسری وکٹ 17 جبکہ مورگن 46، جوزف ڈین لے 128 کے مجموعی اسکور پر پویلین لوٹے، کولن انگرام 39 گیندوں پر 68 رنز اور ڈین لے 51 رنز کے ساتھ نمایاں بلے باز رہے جبکہ محمد سمیع 2 ، فہیم اشرف اور عماد بٹ ایک ایک وکٹ حاصل کرسکے۔

ہدف کے تعاقب میں اسلام آباد یونائیٹڈ نے اننگز کا آغاز کیا تو لک رونکی اور صاحبزادہ فرحان میدان میں اترے، مصباح الیون کے اوپنرز نے ٹیم کو شاندار اوپننگ فراہم کی اور 91 کے مجموعی اسکور پر اسلام آباد کی پہلی وکٹ گری۔

لک رونکی نے دھواں دھار بیٹنگ کرتے ہوئے صرف 19 گیندوں پر پی ایس ایل کی تیز ترین ففٹی مکمل کی اور وہ 94 کے انفرادی اسکور پر فاتحانہ اننگز کھیل پر پویلین لوٹے، یونائیٹڈ کی پہلی وکٹ 91، دوسری 130 پر گری، کراچی کنگز کے کھلاڑیوں نے پانچ کیچز ڈراب کیے جس کا مصباح الیون کے بلے بازوں نے خوب فائدہ اٹھایا اور 13ویں اوور میں ہی 8 وکٹوں سے فتح اپنے نام کی اور فائنل تک رسائی حاصل کرلی۔

پی ایس ایل کے پلے آف کا دوسرا میچ پشاور زلمی اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے مابین بدھ کے روز دبئی انٹرنیشنل اسٹیڈیم میں کھیلا جائے گا، مقابلے میں فتح حاصل کرنے والی ٹیم کراچی کنگز سے میچ کھیلے گی جس کے بعد فائنل تک رسائی حاصل کی جاسکے گی۔


اسلام آباد یونائیٹڈ اننگز خلاصہ

تیرہواں اوور (عثمان شنواری): تیسری گیند پر چوکے کے بعد اسلام آباد یونائیٹڈ نے 8 وکٹوں سے فتح اپنے نام کی۔

بارہواں اوور (محمد عامر): گیارہ رنز اضافے کے بعد مجموعی اسکور 147/2 تک پہنچا۔

گیارہواں اوور (عثمان شنواری): ایلکس ہیلز چوتھی گیند پر آؤٹ ہوئے، اختتام پر ٹیم کا مجموعی اسکور 136/2 تک پہنچا۔

دسواں اوور (شاہد آفریدی): ایک چوکے کے بعد ٹیم کا مجموعی اسکور 124/1 تک پہنچا۔

نواں اوور (محمد عرفان جونیئر): اسلام آباد یونائیٹڈ کا مجموعی اسکور 117/1 تک پہنچا۔

آٹھواں اوور (شاہد آفریدی): 9 رنز اضافے کے بعد اسلام آباد یونائیٹڈ کا مجموعی اسکور 99/1 تک پہنچا۔

ساتواں اوور (ٹائمل ملز): صاحبزادہ فرحان آخری گیند پر کیچ آؤٹ ہوئے، 13 رنز اضافے کے بعد مجموعی اسکور 91/1 تک پہنچا۔

چھٹا اوور (محمد عامر): پہلی گیند پر لک رونکی کا کیچ ڈراپ ہوا، بعد ازاں مجموعی اسکور 75/0 تک پہنچا۔

پانچواں اوور (عثمان شنواری): تین چھکوں کے بعد ٹیم کا مجموعی اسکور 69/0 تک پہنچا، لک رونکی نے اپنی ففٹی مکمل کی۔

چوتھا اوور (شاہد آفریدی): ایک چھکے اور دو چوکوں کی مدد سے ٹیم کا مجموعی اسکور 49/0 تک پہنچا۔

تیسرا اوور (ٹائمل ملز): ایک چھکے اور دو چوکوں کی مدد سے مجموعی اسکور 34/0 تک پہنچا۔

دوسرا اوور (عثمان شنواری): چار رنز اضافے کے بعد مجموعی اسکور 18/0 تک پہنچا۔

یونائیٹڈ کی جانب سے بیٹنگ کا آغاز لک رونکی اور صاحبزادہ فرحان نے کیا جبکہ پہلا اوور محمد عامر نے کیا، پہلے اوور میں دو چوکوں کے بعد مصباح الیون کا مجموعی اسکور 14/0 تک پہنچا۔

کراچی کنگز اننگز خلاصہ

بیسواں اوور (فہیم اشرف): آخری اوور میں دو چھکوں، ایک ڈبل اور تین سلنگز کے بعد مجموعی اسکور 154/4 تک پہنچا۔

انیسواں اوور (محمد سمیع): چار رنز اضافے کے بعد مجموعی اسکور 137/4 تک پہنچا۔

اٹھارواں اوور (فہیم اشرف): جوزف ڈین لے نصف سنچری بنا کر خود ہی وکٹ کو گرا کر آؤٹ ہوئے، کولن انگرام نے آخری بال پر چونکا لگا کر 31 گیندوں پر اپنی ففٹی مکمل کی اور مجموعی اسکور 133/4 تک پہنچا۔

سترہواں اوور ( محمد سمیع): 9 رنز اضافے کے بعد مجموعی اسکور 120/3 تک پہنچا۔

سولہواں اوور (حسین طلعت): دو چھکوں کی مدد سے اوور میں 15 رنز حاصل ہوئے جس کے بعد اختتام پر مجموعی اسکور 111/3 تک پہنچا۔

پندرہواں اوور (فہیم اشرف): ایک چھکے ، ایک چوکے کی مدد سے ٹیم کا مجموعی اسکور 96/3 تک پہنچا۔

چودہواں اوور (شاداب خان): 6 رنز اضافے کے بعد مجموعی اسکور 81/3 تک ہنچا۔

تیرہواں اووور (حسین طلعت): دو رن اضافے کے بعد ٹیم کا مجموعی اسکور 75/3 تک پہنچا۔

بارہواں اوور (شاداب خان): 7 رنز اضافے کے بعد ٹیم کا مجموعی اسکور 73/3 تک پہنچا۔

گیارہواں اوور (عماد بٹ): پہلی ہی گیند پر کولن انگرام نے شاندار شارٹ کھیل کر اننگز کا پہلا چھکا مارا، اگلی بال پر رن لینے کے بعد ڈین لے وکٹ پر آئے اور انہوں نے چونکا مارا، 13 رنز اضافے کے بعد مجموعی اسکور 65/3 تک پہنچا۔

دسواں اوور (شاداب خان): 3 رنزاضافے کے بعد ٹیم کا مجموعی اسکور 52/3 تک پہنچا۔

نواں اوور (عماد بٹ): آئن مورگن پہلی ہی بال پر کیچ آؤٹ ہوئے انہوں نے 16 گیندوں پر 3 چوکوں کی مدد سے 21 رنز کی اننگز کھیلی، یوں کراچی کنگز کی تیسری وکٹ 46 پر گری، تین رنز اضافے کے بعد مجموعی اسکور 49/3 تک پہنچا۔

آٹھواں اوور (شاداب خان): کپتان مورگن نے شاندار ریورس سوئپ شارٹ کھیلتے ہوئے گیند کو باؤنڈری لائن کے باہر پھینک کر چار رنز حاصل کیے، اوور اختتام پر ٹیم کا مجموعی اسکور 46/2 تک پہنچا۔

ساتواں اوور (سمت پٹیل): ایک چوکے اور سنگلز کی مدد سے 9 رنز حاصل ہونے کے بعد مجموعی اسکور 38/2 تک پہنچا۔

چھٹا اوور (فہیم اشرف): ایک چوکے، دو اور سنگل رنز کے بعد ٹیم کا مجموعی اسکور 29/2 تک پہنچا۔

پانچواں اوور (سمت پٹیل): 3 رنز اضافے کے بعد ٹیم کا مجموعی اسکور 21/2 تک پہنچا۔

چوتھا اوور (محمد سمیع): خرم منظور باؤلرکے ہاتھوں 6 کے انفرادی اسکور پر پویلین روانہ ہوئے، نئے آنے والے بیٹسمین بابر اعظم اگلی ہی گیند پر بغیر کھاتہ کھولے پویلین روانہ ہوئے، اختتام پر مجموعی اسکور 17/2 تک پہنچا۔

تیسرا اوور (سمت پٹیل): پہلی بال پر جوئے ڈین لے اسٹمپ ہونے سے محفوظ رہے جس کے بعد انہوں نے دو چوکے لگائے، اختتام پر ٹیم کا مجموعی اسکور 15/0 تک پہنچا۔

دوسرا اوور (محمد سمیع): ایک چوکے اور ایک سنگل کے بعد مجموعی اسکور 7/0 تک پہنچا۔

کراچی کنگز کی جانب سے اوپننگ کے لیے خرم منظور اور جوئے ڈین لے میدان میں آئے جبکہ اسلام آباد کے سمت پٹیل نے پہلا اوور کرایا جس میں ٹیم صرف 2 رنز حاصل کرسکی۔

عماد وسیم کی انجری کے باعث کراچی کنگز کی قیادت آئن مورگن کررہے ہیں جبکہ دوسری طرف اسلام آباد یونائیٹڈ کے قائد مصباح الحق بھی انجری کے باعث میچ سے باہر ہیں اور ان کی جگہ ٹیم کی کپتانی جے پی ڈومینی کررہے ہیں۔

اسکواڈ

کراچی کنگز: جوئے ڈین لے، خرم منظور، بابر اعظم، کولن انگرام، آئن مورگن (کپتان)، شاہد آفریدی، محمد رضوان، محمد عامر، محمد عرفان جونیئر، ٹائمل ملز، عثمان خان شنواری

اسلام آباد یونائیٹڈ: لک رونکی، جے پی ڈومینی (کپتان)، ایلکس ہلز، صاحبزادہ فرحان، طلعت حسین، آصف علی، شاداب خان، فہیم اشرف، عماد بٹ، محمد سمیع اور سمت پٹیل


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں