The news is by your side.

Advertisement

قلعہ عبداللہ کی تحصیل حرمزئی میں ڈھائی کلو میٹر لمبا شگاف، ڈیم ٹوٹنے کا خطرہ

پشین: بلوچستان میں سیلابی بارشوں کے بعد قلعہ عبداللہ کی تحصیل حرمزئی میں ڈھائی کلو میٹر لمبا شگاف پڑ گیا ہے، شگاف پڑنے سے 43 گھر متاثر اور متعدد منہدم ہو چکے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق صوبہ بلوچستان میں طوفانی بارشوں نے تباہی مچا دی ہے، حرمزئی میں ڈھائی کلو میٹر لمبا شگاف پڑ گیا، جب کہ تحصیل حرمزئی میں واقع علیزئی ڈیم ٹوٹنے کا خدشہ بھی پیدا ہو گیا ہے۔

حالیہ بارشوں سے پشین میں 800 کے قریب گھر متاثر ہوئے ہیں۔

تحصیل کاریزات اور برشور میں حالیہ بارشوں سے متعدد راستے بند ہو چکے ہیں، ڈپٹی کمشنر نے اسسٹنٹ ایگری کلچر انجینئر کو فوری بلڈوزر روانہ کرنے کی ہدایت کر دی۔

ڈپٹی کمشنر نے میڈیا کو بتایا کہ رود ملازئی، چرمیان اور توبہ کاکڑی سے برف ہٹانے کے لیے مشینری روانہ کی جا چکی ہے۔

پشین میں تباہی سے متعلق ابتدائی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ حالیہ بارشوں سے 800 کے قریب گھر متاثر ہوئے ہیں، سیلابی ریلے اور بارش کے پانی کے جوہڑ میں ڈوب کر 2 افراد جاں بحق ہوئے، جب کہ کچے مکانات کی چھتیں گرنے سے 5 مویشی ہلاک ہو گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  بلوچستان میں بارشوں نے تباہی مچا دی، 9 افراد جاں بحق، پاک فوج کا ریلیف اینڈ ریسکیو آپریشن

ڈپٹی کمشنر اورنگ زیب بادینی نے کہا ہے کہ حالیہ بارشوں سے متاثرہ 100 خاندانوں کو راشن فراہم کر دیا گیا ہے، 200 سے زائد افراد میں ٹینٹ تقسیم کیے جا چکے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ حالیہ بارشوں سے بند ہونے والے متعدد راستے کھول دیے گئے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں