The news is by your side.

Advertisement

کرونا کیسز میں اضافہ، اسلام آباد کے 2 رہائشی علاقے سیل

اسلام آباد: کرونا کیسز میں اضافے کے باعث وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے 2 رہائشی علاقے سیل کردیئے گئے، ڈی سی اسلام آبادحمزہ شفقات کا کہنا ہے کہ کیسزبڑھنے پر لاک ڈاؤن مزید سخت کردیں گے۔

تفصیلات کے مطابق کورونا کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر اسلام آباد کے 2 رہائشی علاقے سیل کردیئے گئے ، ڈپٹی کمشنر اسلام آباد حمزہ شفقات نے کہا جی سیون ٹو،تھری اور جی نائین میں سب سےزیادہ اموات ہوئیں، اس علاقے میں بلاوجہ گھرسےنکلنےکی اجازت نہیں، گھرسےصرف ایک بندہ نکلے اور ضروری سامان لیکرواپس آئے۔

ڈی سی اسلام آباد کا کہنا تھا کہ ہماری ریپڈرسپانس ٹیم چیک کرتی رہےگی، ہر24گھنٹےبعدصورتحال کاجائزہ لیتےرہیں گے، کیسزبڑھنے پر لاک ڈاؤن مزید سخت کردیں گے۔

مزید پڑھیں : کرونا کیسز میں اضافہ، وفاقی دارالحکومت کے کئی علاقے سیل کرنے کا فیصلہ

حمزہ شفقات نے کہا کہ اگلے5دن میں لگاکہ کیسزبڑھ رہےہیں تولاک ڈاؤن بڑھتارہےگا، پرائیویٹ اسپتالوں میں بھی بیڈزکی تعدادبڑھادی گئی ہے، دنیا کے بڑے ممالک میں بھی اسپتالوں کی صورتحال خراب ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ آج رات جی نائن ٹواورتھری کوسیل کردیں گے، کھانےپینے،ضروری اشیاکےاسٹورزمخصوص وقت کیلئےکھلیں گے جبکہ آج مارکیٹ کو اضافی وقت کیلئے کھولنے کی اجازت دیں گے۔

ڈی سی اسلام نے مزید کہا کہ ایس اوپیزکی خلاف ورزی پرکئی اداروں کوسیل کیا، ادویات کی قیمتوں میں کسی صورت اضافہ نہیں ہونےدیں گے، کورونا کے بارےمیں جھوٹ پھیلانےوالوں پرمقدمات درج کیے جائیں گے۔

گذشتہ روز کرونا کیسز کے باعث وفاقی دارالحکومت کے کئی علاقوں کو سیل کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا اور اس حوالے سے نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا تھا۔

نوٹیفکیشن کے مطابق پہلے مرحلے میں تجارتی مرکز کراچی کمپنی کو سیل کیا جائے گا، جی نائن ٹو اور جی نائن تھری کو بھی سیل کیا جائے گا، ڈپٹی کمشنر اسلام آباد کا کہنا تھا کہ تین روز تک کسی کو گھر سے بھی نکلنے کی اجازت نہیں ہوگی، سیل شدہ علاقوں میں فوج، رینجرز اور پولیس تعینات ہوگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں