The news is by your side.

Advertisement

بھارت، 23 ماہ کے بچے نے 17 سالہ لڑکے کی جان بچالی

نئی دہلی: بھارتی ریاست احمد آباد میں 23 ماہ کے بچے نے گردوں کے عارضے میں مبتلا 17 سالہ لڑکے کی جان بچالی۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق بھارتی ریاست احمد آباد میں 23 ماہ کے بچے وید زنزے واڈیا کی دماغ کے کینسر کے آپریشن کے دوران برین ڈیتھ ہوگئی جس کے بعد بچے کے والدین نے اپنے بچے کے اعضا عطیہ کرنے کا فیصلہ کیا۔

بچے کے عطیہ کیے اعضا سے گردوں کے عارضے میں مبتلا 17 سالہ لڑکے کی جان بچ گئی۔

رپورٹ کے مطابق بچے کے والدین کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن کے دوران ان کے بچے کی اچانک طبیعت بگڑنے پر اسے اسپتال منتقل کیا گیا جہاں اس میں برین ٹیومر کی تشخیص ہوئی، ڈاکٹر کی جانب سے کیے جانے والے آپریشن کے دوران چند پیچیدگیوں کے سبب ٹیومر پھٹ گیا اور ان کے بچے کی دماغی موت واقع ہوگئی۔

وید زنزے کے والدین کے مطابق ڈاکٹروں کی جانب سے انہیں مشورہ دیا گیا کہ اگر وہ اپنے بچے کے دیگر اعضا عطیہ کردیتے ہیں تو ان کے اس فیصلے سے کسی دوسرے بچے کی جان بچ سکتی ہے۔

ڈاکٹر پرانجال مودی کے مطابق وید کے والدین کی اجازت کے بعد بچے کے اعضا دو مریضوں کے ساتھ میچ کیے گئے جن میں سے احمد آباد کے ایک 17 سالہ لڑکے ساتھ اعضا میچ ہوگئے، 17 سالہ مریض گزشتہ ڈیڑھ سال سے گردوں کے عارضے میں مبتلا تھا اور ڈائیلائیسس کے سہارے زندہ تھا۔

رپورٹ کے مطابق 17 سالہ لڑکے کو بچے کے دونوں گردے لگا دئیے گئے ہیں جس کے بعد اسے نئی زندگی مل گئی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں