site
stats
کھیل

پاکستانی ٹیم کو عالمی چیمپئین بنے 24 برس بیت گئے

آسٹریلیا اورنیوزی لینڈ کے میدانوں میں کھیلے جانے والے ورلڈ کپ کو کون پاکستانی بھول سکتا ہےجب پاکستان نے آج ہی کے دن فائنل میں انگلستان کو 22 رنزسے ہرا کرعالمی چیمپئن کا تاج اپنے سرپرسجایا تھا۔

25مارچ 2016 کی اس تاریخ سازجیت کے بعد پاکستان کرکٹ کے سنہرے دورکا آغاز ہوا، قومی ٹیم نے ایک طاقت کے طورپراپنی پہچان بنائی اس ورلڈ کپ میں گرین شرٹس نے کئی بارگرکرسنبھلتے ہوئے مسلسل فتوحات کے ساتھ ٹائٹل جیتا۔

اس تاریخی جیت کے مرکزی کردار عمران خان تھے جس کی سربراہی میں پاکستان نے ورلڈ کپ کا مقابلہ جیتا تھا۔

ورلڈ کپ فائنل میں عمران خان نے ون ڈاؤن پر بیٹنگ کرتے ہوئے72 رنز بنائے تھے جو میچ کا سب سے بڑا انفرادی سکور تھا جبکہ پاکستانی ٹیم کی جیت کا اختتام بھی عمران خان پر ہی ہوا جب انہوں نے انگلینڈ کے آخری بیٹسمین رچرڈ النگورتھ کی وکٹ حاصل کی ۔

کنگ آف سوئنگ وسیم اکرم نے 1992 ورلڈ کپ فائنل میں انگلینڈ کی تین اہم وکٹیں گرائیں اور ان میں سے دو مسلسل گیندوں پرتھیں۔

کرکٹ شائقین 1992 کی طرح آج بھی پاکستانی ٹیم سے ہر میگا ایونٹ میں جیت کی خواہش کرتے ہیں اور آج بھی کھلاڑیوں سے ویسے ہی کھیل کی توقع کرتے ہیں جیسا انہوں نے 25 مارچ 1992 کا ورلڈ کپ جیت کر قوم کو تحفہ دیا ۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top