تفتان میں 2700 پاکستانی زائرین پھنس گئے، اشیائے خوردو نوش ختم iran
The news is by your side.

Advertisement

تفتان میں 2700 پاکستانی زائرین پھنس گئے، اشیائے خوردو نوش ختم

تہران : ایران سے واپس آنے والے ڈھائی سو سے زائد پاکستانی زائرین تفتان بارڈر پر پھنس گئے ہیں سیکیورٹی کے بغیرگھروں کو لوٹ نہیں سکیں گے۔

تفصیلات کے مطابق ایران سے واپس آنے والے 2700 زائرین پاکستان ہاؤس تفتان بارڈر میں مقیم ہیں جہاں باقاعدہ سیکورٹی کی نگرانی میں اپنے اپنے گھروں کو لوٹ سکیں گے۔

خیال رہے کہ تفتان بارڈر پر واقع پاکستان ہاؤس میں 200 لوگوں کے رہنے کی گنجائش ہے لیکن تاحال یہاں پہنچنے والےزائرین کی تعداد 2700 سے تجاوز کر گئی ہے جس کے باعث مسائل پیدا ہوں گے۔

لیویز ذرائع کے مطابق تفتان بارڈرپر پاکستان ہاؤس میں 200 کے بجائے 2700 رہائش پذیر ہیں جس کی وجہ سے مشکلات بڑھ گئی ہیں اور زائرین کے پاس کھانے پینے کی اشیاء ختم ہو چکی ہیں اور نقد رقم نہ ہونے کے باعث خواتین زیور بیچ کر کھانے پینے کی اشیاء خریدنے پر مجبور ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی معاملات کے باعث زائرین کو بغیر سیکیورٹی کے تفتان سے اپنے اپنے گھروں کی جانب جانے کی اجازت نہیں دی جا رہی ہے جیسے ہی سیکویرٹی اہلکار دستیاب ہوں قافلے کو ان کی نگرانی میں روانہ کردیا جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں