The news is by your side.

Advertisement

"مزید فوجی امداد دی جائے” یوکرینی صدر کا عالمی برادری سے مطالبہ

کیف: یوکرینی صدر ولودیمیرزیلنسکی نے ایک بار پھر عالمی برادری سے بڑی اپیل کردی ہے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹ کے مطابق ایک ویڈیو پیغام میں یوکرینی صدر نے کہا کہ یوکرینی افواج اور ریاست کی حفاظت کرنے والے تمام لوگ مشرق میں روس کے شدید حملوں کا مقابلہ کر رہے ہیں، تاہم کچھ مشرقی خطوں میں ان کی فوجی نفری اور جنگی سازوسامان روسی افواج کے مقابلے میں بہت کم ہے۔

انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ روس کو ہمارے حوصلے پست کرنے میں مزید وقت لگے گا، ہمیں اپنے مشرقی علاقوں کی حفاظت کے لئے مزید مدد کی ضرورت ہے خاص طور پر ہتھیاروں کی۔

زیلنسکی کی جانب عالمی مدد کی دوبارہ اپیل ایسے وقت میں آئی ہے جب روسی افواج مشرقی خطوں دونیستک اور لوہانسک پر مکمل قبضے کے لئے شدید حملے جاری رکھے ہوئے ہے، روسی افواج لوہاسنک میں یوکرین کے مضبوط گڑھ سویر دونیستک پر قبضے کے لئے ایڑی چوٹی کا زور لگارہی ہے۔

عین اسی وقت روس ان علاقوں پر اپنا کنٹرول مضبوط بنانے کی کوشش کر رہا ہے جن کے بارے میں اس کا دعویٰ کہ وہ ان پر پہلے ہی قبضہ کر چکا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: یوکرینی صدر کو قتل کرنے کا کوئی ارادہ نہیں، روس

اس سے قبل ورلڈ اکنامک فورم کے سالانہ اجلاس سے ایک ویڈیو لنک کے ذریعے خطاب کرتے ہوئے یوکرینی صدر نے روس پر زیادہ سے زیادہ پابندیاں لگانے کا مطالبہ کیا تھا جس میں تمام روسی بینکوں پر پابندی، روسی تیل پر پابندی اور روس کے ساتھ تمام تجارت بند کرنا شامل ہے۔

یوکرین کے صدر کا کہنا تھا کہ ہمیں دنیا کی حمایت اور یہ جنگ جیتنے کی ضرورت ہے، یہ واقعی وہ لمحہ ہے جب یہ فیصلہ کیا جانا ہے کہ کیا روس دنیا پر حکمرانی کرے گا؟

Comments

یہ بھی پڑھیں