The news is by your side.

Advertisement

امریکا کا عراق سے فوجی مشن ختم کرنے کا فیصلہ

افغانستان کے بعد عراق میں بھی امریکا کا فوجی مشن ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق امریکا کی جانب سے یہ اعلان عراقی وزیراعظم مصطفی الخدیمی کی امریکی صدر جوبائیڈن سے ملاقات کے بعد کیا گیا۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق دونوں عالمی رہنماؤں کے درمیان ہونے والی ملاقات تاریخ بن گئی، ملاقات میں صدر جو بائیڈن اور عراقی وزیر اعظم مصطفیٰ الکاظمی نے ایک معاہدے پر دستخط کئے جس کے بعد عراق میں اٹھارہ سال سے امریکی فوج کی مکمل واپسی طے پائی۔

معاہدے کے مطابق رواں سال کے آخر تک عراق میں امریکی جنگی مشن کو باضابطہ طور پر ختم کر دیا جائے گا۔

معاہدے کے تحت عراق میں موجود بین الاقوامی اتحاد سے منسلک افراد اور شخصیات، مشورے اور تربیت فراہم کرنے والے اہلکاروں کو سیکیورٹی فراہم کرنا عراق کی ذمہ داری ہوگی۔

یہ اعلان ایسے وقت میں ہوا ہے جب امریکہ افغانستان میں بھی بیس سالہ جنگ کو ختم کرنے کے آخری مراحل میں ہے۔

سابق امریکی صدر باراک اوباما نے دو ہزار گیارہ میں عراق سے فوج کو واپس بلا لیا تھا، تاہم داعش نے مغربی اور شمالی عراق کے بڑے علاقے پر قبضہ کیا تو دو ہزار چودہ میں عراقی فورسز کی تربیت اور مشاورت کے لیے فوجیوں کو عراق واپس بھیجا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں