The news is by your side.

Advertisement

خیبرپختونخواہ، عوام کی ’امانت‘ چرانے والے 28 افراد گرفتار

پشاور: خیبرپختونخواہ کی ضلعی انتظامیہ نے معدنیات کی چوری میں ملوث 28 افراد کو گرفتار کرلیا۔

نمائندہ اے آر وائی نیوز کے مطابق وزیراعلیٰ خیبرپختونخواہ کی ہدایت پر خیبرپختونخواہ کے مختلف علاقوں میں معدنیات چوری اور غیر قانونی کان کنی میں ملوث عناصر کے خلاف کارروائیاں تیز کردی گئیں۔

وزیراعلیٰ کی ہدایت پرضلعی انتظامیہ نے 2 اضلاع (نوشہرہ اور صوابی) میں کارروائی کر کے 28 افراد کو گرفتار کیا۔

ضلع نوشہرہ سے 12 جبکہ ضلع صوابی سے 16 افراد کو گرفتار کر کے مائننگ قوانین کی دفعات کے تحت مقدمات درج کرلیے گئے، حراست میں لیے جانے والے تمام ملزمان کو جیل منتقل کردیا گیا۔

ضلعی انتظامیہ نے ملزمان کے ٹرک، ٹریکٹر اور ٹرالیوں سمیت دیگر اشیاء بھی قبضے میں لے لیں۔

دوسری جانب وزیراعلیٰ خیبرپختونخواہ نے تمام اضلاع کی انتظامیہ کو غیر قانونی کان کنی میں ملوث عناصر کے خلاف کارروائی تیز کرنے کی ہدایت کر تے ہوئے کہا ہے کہ عوامی وسائل کو نقصان پہنچانے والے اور حکومت کی بدنامی کا باعث بننے والے مافیا کے ساتھ آہنی ہاتھوں سے نماٹا جائے اور انہیں قانون کے مطابق سخت سزا دی جائے۔

وزیراعلیٰ کا کہنا تھا کہ ’معدنیات عوام کی امانت ہے، حکومت ان وسائل کے تحفظ کے لیے ہر ممکن اقدامات کرے گی اور غیر قانونی طور پر کان کنی کرنے والوں کو کیفر کردار تک پہنچائے گی‘۔

Comments

یہ بھی پڑھیں