The news is by your side.

Advertisement

پنجاب پولیس کے جوانوں پر 2 دنوں میں 3 حملے، سب انسپکٹر سمیت 2 اہل کار جاں بحق

لاہور: گزشتہ دو دنوں کے دوران پنجاب پولیس کے اہل کاروں پر تین حملے ہوئے، جس میں ایک انسپکٹر سمیت 2 اہل کار جاں بحق ہو گئے جب کہ ایک ٹریفک وارڈن زخمی ہو گیا۔

تفصیلات کے مطابق آج تھانہ سول لائن راولپنڈی کے علاقے میں فائرنگ کے نتیجے میں سب انسپکٹر راجہ ارشد جاں بحق ہو گیا، پولیس ترجمان کا کہنا ہے کہ سب انسپکٹر ارشد تھانہ صدر بیرونی میں تعینات تھا۔

مقتول سب انسپکٹر کے بیٹے شاہ زیب نے بتایا کہ ان کی فیملی کار میں جا رہی تھی، کہ موٹر سائیکل سوار ملزمان نے کار پر فائرنگ کر دی۔

پولیس ترجمان کا کہنا ہے کہ سی پی او نے ایس پی پوٹھوہار اور ایس پی صدر پر مشتمل کمیٹی تشکیل دے دی ہے، ملزمان کو جلد گرفتار کر لیا جائے گا۔

آئی جی پنجاب نے حملوں کے واقعات پر کہا ہے کہ اس سے پولیس کا مورال کم نہیں ہوگا، پولیس کے جوان عوام کے جان و مال کی حفاظت کریں گے۔

دریں اثنا، سب انسپکٹر کی شہادت کی رپورٹ سی پی او راولپنڈی نے طلب کر لی ہے۔

یاد رہے گزشتہ روز لاہور کے علاقے کاہنہ میں ڈاکوؤں کی فائرنگ سے پولیس اہل کار ساجد جاں بحق ہو گیا تھا، ساجد دیگر اہل کاروں کے ہم راہ گشت پر تھا، انھوں نے موٹر سائیکل سواروں کو رکنے کا اشارہ کیا لیکن ملزمان نے رکنے کے بجائے پولیس اہل کاروں پر فائرنگ کر دی اور فرار ہو گئے۔

ادھر آج امین پارک، لاہور کے علاقے میں اسلحہ بردار پیدل ڈکیت نے دیدہ دلیری کے ساتھ ایک شہری سے موٹر سائیکل چھینی اور فرار ہو گیا، واردات کی سی سی ٹی وی فوٹیج بھی سامنے آ گئی۔

موٹر سائیکل سوار بچے کو اسکول لے جا رہا تھا کہ ڈاکو نے روک کر موٹر سائیکل چھین لی۔ واردات کے خلاف درخواست متعلقہ تھانے میں جمع کرا دی گئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں