The news is by your side.

Advertisement

بھارت: لڑکیوں کو چھیڑنے سے منع کرنے پر 4 مسلمان شہید

نئی دہلی : بھارت کے شہر بجنور میں مسلمان بچیوں کو چھیڑنے پر احتجاج کرنے والے مسلمانوں پر فائرنگ کرکے چار مسلمان نوجوانوں کو شہید اور 12 کو زخمی کردیا گیا۔

بجنور پولیس کے مطابق حادثہ اُس وقت پیش آیا جب مسلمان بچیاں معمول کے مطابق اسکول جا رہی تھیں کہ مقامی جاٹ برادری کے کچھ نوجوانوں نے بچیوں کے ساتھ چھیڑ خانی کی جس پر علاقہ کے بزرگوں نے انہیں منع کیا اور ایسی حرکات سے باز رہنے کی تاکید کی،تا ہم ہندو لڑکے باز نہ آئے جس پر تلخ کلامی بڑھ گئی۔

مسلمان علاقہ مکینوں نے جاٹ برادری کے نوجوانوں کی شرم ناک حرکت پر احتجاج شروع کیا تو مسلح ہندو لڑکوں نے اُن پر فائرنگ کر دی جس کے نتیجے میں 4 مسلمان نوجوان رضوان،سرفراز، احسان اور انیس جاں بحق اور 12 افراد شدید زخمی ہوگئے۔

ریسکیو ادارے نے وقوعہ پر پہنچ کر زخمی اور جاں بحق ہونے والے افراد کو فوری طور پر قریبی اسپتال منتقل کردیا جہاں زخمیوں کو طبی امداد دی جا رہی ہے جب کہ فائرنگ سے جاں بحق ہونے والے نوجوانوں کی میتیں لواحقین کے حوالے کر دی گئیں۔

اس موقع پر پولیس نے موقف اختیار کیا ہے کہ جائے وقوعہ سے ابتدائی شواہد جمع کر لیے ہیں جب کہ تصادم میں ملوث سات افراد کو گرفتار کرکے تھانے منتقل کردیا گیا ہے جہاں ملزمان سے تحقیقات کا عمل جا ری ہے اور علاقے میں پولیس کی بھاری نفری بھی تعینات کر دی گئی ہے جس کے بعد امن و امان کی صورتحال قابو میں ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں