The news is by your side.

Advertisement

اقوام متحدہ کے ادارہ برائے اطفال ’یونیسیف‘ کے 30 برس مکمل

غربت اور امتیازی سلوک لاکھوں بچوں کی نشوونما کے لیے خطرہ ہیں، یونیسیف

نیویارک : اقوام متحدہ میں بچوں کی بہبود کے ادارے یونیسیف نے خبردار کیا ہے کہ دنیا میں بچوں کے تحفظ کی کوششیں ناکام ہو سکتی ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کے ادارے یونیسیف کے قیام کی تیسویں سالگرہ کے موقع پر ایک بیان میں ادارے نے کہا کہ غربت اور امتیازی سلوک لاکھوں بچوں کی نشوونما کے لیے خطرہ ہیں۔

یونیسیف کا کہنا ہے کہ اسی طرح موسمیاتی تبدیلیوں نے بھی بچوں کو خاص طور پر متاثر کیا۔

یونیسیف نے کہا کہ اس کی کوششوں سے پانچ سال سے کم عمر میں وفات پانے والے بچوں کی تعداد میں ساٹھ فیصد کمی ہوئی، اسی طرح دنیا میں اسکول نہ جانے والے بچوں کی تعداد اٹھارہ سے کم ہو کر آٹھ فیصد ہو گئی ہے۔

وسطی افریقہ میں 19 لاکھ سے زائد بچے تشدد سے متاثر ہوئے، یونیسیف

تنازعات کے شکار علاقوں میں گزشتہ برس 29 ملین بچے پیدا ہوئے، یونیسیف

رواں برس اگست میں اقوام متحدہ کے ذیلی ادارے برائے اطفال یونیسیف نے اپنی تحقیقاتی رپورٹ میں انکشاف کیا تھا کہ دنیا بھر میں روزانہ کی بنیاد پر سات ہزار بچے صحت کی ناکافی سہولیات میسر نہ ہونے کے باعث ہلاک ہو جاتے ہیں جن میں اکثریت محض ایک سال کی عمر کے بچوں کی ہوتی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں