The news is by your side.

Advertisement

سارہ ایورارڈ کیس، ریپ اور قتل کا مجرم اپنے انجام کو پہنچا

لندن: عدالت نے سارہ ایورارڈ کے قتل کا فیصلہ سنادیا ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق سارہ ایورارڈ  کے قاتل پولیس افسر وین کوزنز کو عمر قید کی سزا سنادی گئی ہے، کیس کی سماعت کرنے والے جج لارڈ جسٹس فلفورڈ نے سارہ ایویراڈ کے قتل ک افسوسناک اور سفاکانہ قرار دیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق پولیس افسر وین کوزنز نے رواں سال تین مارچ کو سارہ کو گھر جاتے ہوئے اغوا کیا بعد ازاں جھوٹے الزام میں گرفتار کرکے ہتھکڑی لگادی تھی، ایک ہفتے بعد ایشفورڈ کے علاقے تینتیس سالہ سارہ کی جلی ہوئی لاش ملی تھی، پوسٹ مارٹم رپورٹ میں بتایا گیا کہ سارہ کی موت گردن کے دبنے کے نتیجے میں ہوئی۔

سارہ ایورارڈ  کے قاتل پولیس افسر وین کوزنز نے عدالت کے سامنے قتل، عصمت دری اور اغوا کے جرم کا اعتراف کیا، جس پر عدالت نے پوری زندگی کے لئے عمر قید کی سزا سنائی، اس عمر قید کا مطلب یہ ہے کہ اس کے پاس پیرول کا کوئی امکان نہیں ہے۔

یاد رہے کہ مارچ میں نیشنل لاک ڈاؤن کے دوران سارہ ایورارڈ نامی خاتون کا لاپتا ہونا برطانیہ کے ہائی پروفائل لاپتا افراد کے کیسز میں سے ایک تھا جس نے سڑکوں پر خواتین کی حفاظت کے بارے میں احتجاج اور بڑے پیمانے پر بحث کو جنم دیا۔

ایورارڈ کے قتل کے بعد عوامی مقامات پر خواتین کے عدم تحفظ پر بڑے پیمانے احتجاج کئے گئے، جس کے بعد حکومت نے قانون سازی میں بہتری لانے کا وعدہ کیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں