جہلم : 33لاکھ سال پرانا ہاتھی کے دانت کا ٹکڑا دریافت -
The news is by your side.

Advertisement

جہلم : 33لاکھ سال پرانا ہاتھی کے دانت کا ٹکڑا دریافت

جہلم : تینتیس لاکھ سال پرانا ہاتھی کے دانت کا ٹکڑا دریافت کرلیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق جہلم کے پہاڑی علاقے ڈومیلی سے تحقیق کرنے والے پنجاب یونیورسٹی کے شعبہ حیوانیات کے طلباء نے تینتیس لاکھ سال پرانا ہاتھی کے دانت کا ٹکڑا دریافت کیا ، ملنے والے ہاتھی کے دانت کا وزن تین کلو ہے جبکہ چھ انچ لمبا اور تین انچ چوڑا ہے۔

مزید تحقیق کے لیے ہاتھی کے دانت کو لاہور لے جایا جائے گا۔

آثار قدیمہ کے ماہرین کا کہنا ہے کہ لاکھوں سال قبل جہلم کی تحصیل سوہاوہ کا پہاڑی علاقہ ڈومیلی تتروٹ اور رسول میں گھنے اور طویل جنگلات تھے، جہاں دیوقامت ہاتھیوں کی بڑی تعداد بستی تھی۔

یاد رہے اس سے قبل بھی پنجاب کے شہر جہلم سے محققین نے تقریباً 30 لاکھ سال پرانے انانکس نسل کے دانت کی جوڑی دریافت کی تھی ، 6 فٹ سے زائد لمبے یہ دانت لاکھوں سال پرانے ہاتھی کے خاندان سے تعلق رکھتے تھے۔

تاہم گجرات کھاریاں کے علاقے سے 11 لاکھ سال پرانا ایک ہاتھی دانت دریافت کیا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں