The news is by your side.

Advertisement

4 سالہ بچے نے پولیس بُلالی، ماجرا کیا ہے؟

بچے بعض اوقات ایسی شرارت کرتے ہیں کہ چہروں پر غصے کی بجائے مسکراہٹ آجاتی ہیں۔

ایسا ہی ایک واقعہ نیوزی لینڈ میں پیش آیا جہاں چار سالہ بچے نے ایمرجنسی کال کرکے پولیس کو بلالیا اور ان سے کہا کہ آکر میرے ’کھلونے‘ چیک کرلیں۔

نیوزی لینڈ میں ایک 4 سالہ لڑکے نے ایمرجنسی نمبر پر فون کر کے پولیس سے پوچھا کہ کیا وہ آ کر اس کے کھلونے چیک کر سکتے ہیں۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ لائن پر موجود افسر نے کال منقطع نہیں کی اور بچے کے پاس پہنچ گیا اس کے کھلونے چیک کیے اور کہا کہ بچے کے پاس کھلونے واقعی بہت اچھے تھے۔

اس کال کی آڈیو کو اس ہفتے پولیس ڈیپارٹمنٹ نے سوشل میڈیا پر شیئر کی، پولیس کی جانب سے شیئر کردہ پوسٹ میں ایک افسر کے ساتھ شرارتی کمسن بچے کو بیٹھے دیکھا جاسکتا ہے۔

یہ بالکل وہی ہے جو آپ سوچتے ہیں۔ محکمہ نے دراصل ایک افسر کو بچے کے کھلونے چیک کرنے کے لیے بھیجا۔

"کیا میں تمہیں کچھ بتا سکتا ہوں؟ میرے پاس تمہارے لیے کچھ کھلونے ہیں۔ آؤ اور انہیں دیکھو ،” بچے نے آپریٹر سے کہا۔ بعد میں جب افسر واپس کال کرتا ہے ، بچے کے سرپرست نے فون اٹھایا اور تصدیق کی کہ یہ غلطی تھی۔

اس کے بعد آپریٹر نے ایک افسر کو ڈائل کیا اور کہا: "وہاں ایک 4 سالہ بچہ ہے جو پولیس کو اپنے کھلونے دکھانا چاہتا ہے۔”

جس پر ڈیوٹی پر موجود ایک یونٹ افسر کہتا ہے: "ہاں میں حاضر ہوں۔”

سدرن ڈسٹرکٹ پولیس نے فیس بک پر لکھا: "اگرچہ ہم بچوں کو 111 پر کال کرنے کی ترغیب نہیں دیتے کہ وہ ہمیں اپنے کھلونے دکھائیں لیکن یہ بہت ہی اچھا واقعہ تھا۔”

Comments

یہ بھی پڑھیں