لاہور بورڈ آف پرائمری اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن کے 40 ملازمین برطرف -
The news is by your side.

Advertisement

لاہور بورڈ آف پرائمری اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن کے 40 ملازمین برطرف

لاہور: بورڈ آف پرائمری اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن لاہور کے 40 ملازمین کو بغیرکسی نوٹس کے برطرف کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور بورڈ آف پرائمری اینڈسیکنڈری ایجوکیشن نے 40 ملازمین کواچانک بغیرکسی نوٹس کے برطرف کردیا، برطرف کیے گئے ملازمین میں اکثریت پرنٹنگ مشین مکینکس کی ہے۔

بورڈ آف پرائمری اینڈسیکنڈری ایجوکیشن کی جانب سے برطرف کیے گئے ملازمین گزشتہ 15 سال سے ادارے میں ملازمت کررہے تھے۔

متاثرین کا کہنا ہے کہ اچانک برطرفی کا کوئی جواز نہیں ہے، عمران خان کے نئے پاکستان میں ہمارا معاشی قتل کیا گیا ہے۔
متاثرین نے چیئرمین پی ٹی آئی کی لاہور آمد پر ان کی رہائش گاہ کے باہراحتجاج کرنے کا بھی اعلان کیا ہے۔

دوسری جانب لاہور بورڈ آف پرائمری اینڈسیکنڈری ایجوکیشن کا کہنا ہے برطرف ملازمین ڈیلی ویجز پرکام کررہے تھے لہذا انہین نوٹس دینا ضروری نہیں تھا۔

خیال رہے کہ رواں سال اپریل میں پنجاب یونیورسٹی میں گریڈ 16 اور 17 کے 105 سے زائد کنٹریکٹ ملازمین کو نوکری سے برطرف کردیا تھا۔

بعدازاں‌ برطرف ملازمین نے سپریم کورٹ سے رجوع کیا تھا جس پریونیورسٹی انتظامیہ نے 17 ملازمین کو ملازمتوں پربحال کردیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں