The news is by your side.

Advertisement

قرآن پاک پڑھانے والا استاد جنسی ہراسگی کے الزام میں گرفتار

دبئی : پولیس نے بھارتی دوشیزہ کو قرآن پاک کی تعلیم دینے والے بنگلادیشی شہری کو مبینہ جنسی ہراسگی کے الزام میں گرفتار کرکے عدالت میں پیش کردیا۔

تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات کی ریاست دبئی کی پولیس نے نجی ٹیوسن پڑھانے کے دوران 15 سالہ لڑکی کو مبینہ طور پر ہراساں کرنے کے جرم میں ٹیوسن ٹیچر کو گرفتار کرکے عدالت کے سامنے پیش کردیا ہے۔

دبئی کے پبلک پراسیکوٹر کا کہنا ہے کہ ملزم 40 سالہ بنگلا دیشی شہری ہے جو ملازمت کی غرض سے دبئی میں مقیم ہے، مذکورہ شخص المقربات کے علاقے میں مقیم 15 سالہ بھارتی لڑکی کو مبینہ طور پر 5 مرتبہ لمس کیا تھا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ بنگلادیشی ملزم نے عدالت کے سامنے اپنے اوپر لگائے جانے والے الزامات کو مسترد کردیا تھا۔

عربی خبر رساں اداروں کے مطابق پبلک پراسیکیوٹر نے ملزم کا کیس دوشیزہ کو چھونے کے مقدمات کے تحت عدالت منتقل کردیا تھا جہاں پراسیکیوٹر نے مذکورہ شخص کو اماراتی قانون کے مطابق سخت سزا دینے کی درخواست کی۔

بھارتی طالبہ نے بتایا کہ بنگلا دیشی ٹیچر گذشتہ تین ماہ سے قرانِ پاک کی تعلیم دے رہا ہے، جو ہفتے میں 4 دن میرے گھر آکر قرآن مجید پڑھاتا تھا۔

متاثرہ لڑکی نے تفتیش کاروں کو بتایا کہ ملزم نے 17 جون کو قرآن پاک پڑھاتے ہوئ مجھے پکڑا اور خسار پر بوسہ لیا اور کہا کہ اس بارے میں کسی کو مت بتانا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق بھارتی دوشیزہ کا کہنا تھا کہ ’استاد کی جانب سے ایسی حرکت کرنے پر میں ڈر گئی اور اپنے والدین کو سارا ماجرا بتا دیا۔

دبئی پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم نے دوران تفتیش پبلک پراسیکیوٹر کے سامنے اپنے جرم کا اعتراف کرتے ہوئے کہا تھا کہ ’میں نے دوشیزہ کو نامناسب طریقے سے لمس کیا اور رخساروں پر بوسہ بھی لیا تھا‘۔

عدالت نے دونوں فریقین کے بیانات سننے کے بعد کیس کی سماعت 12 اگست تک ملتوی کردی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں