The news is by your side.

Advertisement

تین ماہ میں 42 ارب چالیس کروڑ روپے کے موبائل فون درآمد

کراچی: ادارہ شماریات کی جانب سے جاری کردہ رپورٹ میں‌ بتایا گیا ہے کہ پاکستانیوں نے جولائی سے ستمبر کے دوران 42 ارب چالیس کروڑ روپے کے موبائل فون درآمد کیے۔

تفصیلات کے مطابق مالی چیلنیجز کے باوجود پاکستان میں موبائل فون کی درآمد میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا اور پاکستانیوں نے جولائی سے ستمبر کے دوران 42 ارب40 کروڑ روپے  کے موبائل فون درآمد کیے۔

ادارہ شماریات کے مطابق 3 ماہ میں موبائل فون کی درآمد میں 71 فیصد کا نمایاں اضافہ ہوا، گزشتہ مالی سال پہلے 3 ماہ میں 24ارب 72 کروڑ روپے مالیت کے موبائل فون درآمد ہوئے تھے۔

رپورٹ کے مطابق 3 ماہ کے دوران روپے کی قدر کم ہونے سے موبائل فون ڈالر کی قیمت میں 35 فیصد اضافہ ہوا، اُس کے باوجود 26.90 کروڑ ڈالر موبائل فون کی درآمد پر خرچ کیے گئے جبکہ گزشتہ مالی سال اسی مدت میں 19.9 کروڑ ڈالر کے اخراجات آئے تھے۔

مزید پڑھیں: بیرونِ ملک سے ایک موبائل فون لانے کی اجازت پر مخالفت، سینیٹ کمیٹی کا نظر ثانی کا مطالبہ

ماہرین کے مطابق ایک سال میں روپے کی قدرمیں 30 فیصد کمی کی وجہ سے موبائل فون کی درآمد پر اضافی رقم ادا کرنی پڑی، حکومت کو صرف رجسٹرڈ موبائل فون کی درآمد کی شرط سے فائدہ ہونے لگا، غیر رجسٹرڈ اور اسمگل موبائل فون کی روک تھام کے اقدامات سے ٹیکس اور ڈیوٹی کی وصولی میں مزید اضافہ ہوگا۔

یاد رہے کہ حکومت نے غیر قانونی موبائل فون لانے پر پابندی عائد کر رکھی ہے اور بیرونِ ممالک سے آنے والے فون کو چلانے کے لیے انہیں رجسٹرڈ کرانا ضروری ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں