The news is by your side.

کوئٹہ: 50 فراری ہتھیار ڈال کر قومی دھارے میں شامل

کوئٹہ: مختلف کالعدم تنظیموں سے تعلق رکھنے والے تین کمانڈروں سمیت 50 فراری ہتھیار پھینک کر قومی دھارے میں شامل ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق کوئٹہ میں فراریوں کی ہتھیار ڈالنے کی تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں 50 فراری ہتھیار ڈال کر قومی دھارے میں شامل ہوگئے جن میں تین کمانڈر بھی شامل ہیں۔

ہتھیار ڈالنے والے فراریوں کا تعلق کالعدم بی ایل اے، کالعدم بی آر اے اور یو بی اے سے ہے۔

تقریب میں وزیر داخلہ بلوچستان میر ضیاء لانگو، ڈی آئی جی ایف سی بریگیڈیئر تصور حسن سمیت دیگر افسران نے شرکت کی۔

وزیر داخلہ بلوچستان میر ضیاء لانگو نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دشمن کا راستہ چھوڑ کر وطن کی ترقی کے لیے لوٹنے والوں کو خوش آمدید کہتے ہیں، دشمن نے بلوچستان کے معصوم لوگوں کو بہکا کر وطن کے خلاف استعمال کیا۔

انہوں نے کہا کہ ہم نے دشمن کے ناپاک عزائم کو خاک میں ملادیا ہے، بھٹکے ہوئے لوگوں کو پیغام دیتا ہوں کہ اغیار کے بہکاوے میں نہ آئیں اور قومی دھارے میں شامل ہوجائیں۔

مزید پڑھیں: کالعدم بی آر اے کا اہم کمانڈر ہتھیار ڈال کر قومی دھارے میں شامل

واضح رہے کہ گزشتہ سال نومبر میں کالعدم تنظیم بلوچستان ریپبلکن آرمی کے اہم کمانڈر سمیت 70 سے زائد عسکریت پسندوں نے ہتھیار ڈال دیے تھے۔

یاد رہے کہ گزشتہ سال ستمبر میں بھی بلوچستان میں کالعدم تنظیموں کے 265 عسکریت پسند ہتھیار ڈال کر قومی دھارے میں شامل ہو گئے تھے، عسکریت پسندوں نے اس موقع پر قومی تعمیر و ترقی کے عزم کا اظہار بھی کیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں