The news is by your side.

Advertisement

ٹھٹھہ، 50 سال کے زمیندار کا کمسن بچی سے زبردستی نکاح

ٹھٹھہ: سندھ کے شہر ٹھٹھہ میں 5 سال کے زمیندار کا کمسن بچی سے زبردستی نکاح کرادیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ کے شہر ٹھٹھہ میں اور کمسن بچی زمیندار کی بھینٹ چڑھنے سے بچ گئئی، پولیس نے مکلی کنبھار محلے میں پہنچ کر کمسن بچی سے نکاح کرنے والے دلہا کو گرفتار کرلیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ 50 سالہ زمیندار اس سے پہلے پانچ بیویوں کو طلاق دے چکا ہے، زمیندار کا 12 سال کی لڑکی سے بھی زبردستی نکاح کرایا گیا تھا۔

ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ نکاح اور رخصتی کے بعد لڑکی کے انکار کرنے پر اسے تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم زمیندار کو گرفتار کرکے تحقیقات کا آغاز کردیا گیا ہے پولیس اس قسم کے واقعات کی روک تھام کے لیے کوشاں ہے۔

مزید پڑھیں: شکارپور: 10 سال کی بچی سے شادی کرنے والا 40 سالہ شخص گرفتار

واضح رہے کہ سندھ کے شہر شکارپور میں گزشتہ سال مئی میں معصوم بچی سے شادی کرنے والے 40 سال کے شخص کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

رخصتی سے قبل ہی پولیس موقع پر پہنچ گئی تھی، چالیس سالہ دلہے کو پولیس نے گرفتار کر لیا، اور دس سالہ بچی کو حفاظتی تحویل میں لے لیا گیا تھا۔

پولیس کے موقع پر پہنچتے ہی نکاح خواں فرار ہو گیا تھا، جب کہ دلہن بنائی جانے والی دس سالہ بچی رو رہی تھی، پولیس کے پہنچنے سے قبل اس کا نکاح پڑھایا جا چکا تھا۔

معلوم ہوا ہے کہ دس سالہ بچی یتیم ہے، اور اس کی دادی نے مبینہ طور پر اسے ڈھائی لاکھ روپے میں چالیس سالہ شخص کو فروخت کر دیا تھا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں