The news is by your side.

Advertisement

طالبان نے غیر معیاری تیل لانے پر ایرانی ٹینکروں کے ساتھ کیا کیا؟

نمروز: طالبان نے خراب کوالٹی کا تیل لانے پر 12 ایرانی آئل ٹینکرز کو افغانستان میں داخل ہونے سے روک دیا۔

افغان میڈیا کے مبطابق افغان صوبہ نمروز میں تعینات طالبان سیکیورٹی حکام کا کہنا ہے کہ  ایران سے درآمد کیے گئے تیل کے 12 ٹرکوں میں غیر معیاری ایندھن پایا گیا، جس کی بنیاد پر انہیں افغانستان میں داخل ہونے سے روک دیا گیا ہے۔

نمروز میں طالبان چیف آف پولیس آفس میں کرائم کنٹرول کے ڈائریکٹر قاری عبدالرحیم حذیفہ نے کہا کہ ایران سے آنے والے تیل کی نارم اینڈ اسٹینڈرڈ ڈپارٹمنٹ کی لیبارٹری میں جانچ کی گئی،  لیبارٹری میں جانچ  کے دوران ایران سے درآمد کیے گئے 5 لاکھ لیٹر تیل کے 12 ٹینکروں میں ناقص معیار کا تیل پایا گیا جس کے بعد ٹینکروں کو واپس ایران بھیج دیا گیا ہے۔

ٹرک ڈرائیوروں نے طالبان حکومت کی جانب سے آئل ٹینکرز کو واپس بھیجنے کے فیصلہ پر عدم اطمینان کا اظہار کیا ہے، ان کا کہنا تھا کہ ہمیں اس حوالے سے پہلے آگاہ نہیں کیا گیا تھا۔

دوسری جانب صوبہ نمروز کے متعدد مقامی لوگوں نے طالبان کے اس اقدام کو سراہا ہے اور کہا ہے کہ ناقص معیار کا تیل فضائی آلودگی میں معاون اور شہریوں کیلئے سنگین مسائل کا باعث بن رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: طالبان کی چین کو ’تمام خدشات‘ دور کرنے کی یقین دہانی

واضح رہے کہ اس سے قبل طالبان کے نائب وزیر اعظم ملا عبدالغنی برادر کی زیر صدارت اقتصادی کمیشن کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا تھا کہ مذکورہ بالا ٹیم خراب کوالٹی کے پیٹرولیم اور گیس مصنوعات کی نشاندہی کرنے اور ان کی درآمد پر پابندی عائد کرنے کی ذمہ دار ہوگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں