The news is by your side.

Advertisement

انڈونیشیا: لاپتا آبدوز کا معمہ حل، نیوی نے تصدیق کردی

جکارتہ: انڈونیشیا کی بحریہ کی لاپتا ہونے والی آبدوز جس پر عملے کے 53 افراد سوار تھے ہالی کے جزیرے میں ڈوب گئی۔

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی نے انڈونیشیا کے نیول چیف کے حوالے سے بتایا ہے کہ لاپتا ہونے والی آبدوز کا ملبہ سمندر میں 850 میٹرز کی گہرائی میں پایا گیا ہے جبکہ بحری جہاز کی کچھ باقیات مل گئی ہیں جس کے بعد آبدوز کے 53 اہلکاروں کے زندہ ملنے کے امکانات ختم ہوگئے ہیں۔

بحری آبدوز میں صرف تین دن کی آکسیجن موجود تھی، جرمن ساختہ بحری جہاز 40 سال پرانا تھا لیکن 2012 میں اس کی دوبارہ سے مرمت کی گئی تھی۔۔

انڈونیشیائی حکام کے مطابق آبدوز میں صرف چند گھنٹے کی آکسیجن باقی رہ گئی ہے۔

انڈونیشین نیول چیف یوڈو مارگونو کا کہنا ہے کہ ہمیں آبدوز کے کئی ٹکڑے اور حصے ملے ہیں اور وہ سب میرین کے ساتھ جڑے ہوئے تھے جو جہاز سے الگ ہوگئے ہیں۔

انڈونیشیا نیوی کے مطابق اتنی گہرائی میں ڈوبنے کی وجہ سے عملے کے 53 ارکان کے زندہ بچ جانے کے امکانات بھی ختم ہوگئے ہیں، سرچ آپریشن جاری رکھنے اور ملبے کو نکالنے سے متعلق ابھی کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ 21 اپریل کو انڈونیشیا کے جزیرے بالی کے قریب بحریہ کی آبدوز لاپتا ہوگئی تھی، آبدوز میں عملے کے 53 افراد موجود تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں