مصر، اور دہشت گردوں کے درمیان جھڑپ، 35 اہلکار جاں بحق egypt
The news is by your side.

Advertisement

مصرمیں فوج اوردہشت گردوں کےدرمیان جھڑپ، 54 اہلکارجاں بحق

قاہرہ : مصر میں فوج اور پولیس کی مشترکہ کارروائی کے دوران دہشت گردوں سے مُڈ بھیڑ کے نتیجے میں افسران اور اہلکاروں سمیت 54 اہلکارہلاک جبکہ متعدد دہشت گردوں کے بھی مارے جانے کی اطلاعات ہیں۔

غیرملکی خبرساں ادارے کے مطابق مصر کے دارالحکومت قاہرہ سے 200 کلو میٹر جنوب مشرق میں بہاریہ نخلستان میں دہشت گردوں کے ساتھ جھڑپوں میں پولیس اور فوج کے افسران سمیت 54 اہلکار ہلاک جبکہ متعدد زخمی ہوگئے۔

مصر کی وزات داخلہ نے دہشت گردوں کے ساتھ ہونے والی جھڑپوں کی تصدیق کرتے ہوئےکئی حملہ آوروں کے مارے جانے کا بھی دعویٰ کیا ہے۔

وزارت داخلہ نے بتایا کہ دہشت گردوں کے ساتھ ہونے والی جھڑپوں میں مجموعی طور پر فوج اور پولیس کے54 اہلکار ہلاک ہوئے ہیں۔

مصری حکام کی جانب سے بیان میں کہا گیا ہے کہ قاہرہ سے 200 کلومیٹر جنوب مشرق میں بہاریہ نخلستان میں دہشت گردوں نے سیکورٹی فورسز پر حملہ کیا۔

دہشت گردوں نے سیکورٹی فورسز کے قافلے پر راکٹ فائر کیے اوردھماکہ خیز مواد کا بھی استعمال کیا۔

دوسری جانب مصر میں پے درپے ہونے والی دہشت گردی کی وارداتوں میں ملوث انتہا پسند گروپ ’’ حسم ‘‘ نے حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے بتایا کہ مصری پولیس اور فوج کے قافلے کو نشانہ بنایا ہے۔


مصر میں پولیس قافلے پر حملہ ‘ 18 افراد ہلاک


یاد رہے کہ گزشتہ ماہ 12 ستمبر کو مصر کے شمالی علاقے سیناء میں پولیس کے قافلے پر دہشت گردوں کے حملے میں 18 افراد ہلاک جبکہ متعدد زخمی ہوگئے تھے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں