The news is by your side.

Advertisement

وائس چانسلر ویمن یونیورسٹی صوابی کو جبری رخصت پر بھیج دیا گیا

پشاور: ویمن یونیورسٹی صوابی میں بے قاعدگیوں، اختیارات کے غلط استعمال اور میرٹ کے برعکس غیرقانونی بھرتیوں پر وائس چانسلر ڈاکٹر شاہانہ عروج کو جبری رخصت پر بھیج دیا گیا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق گورنر انسپکشن ٹیم نے ویمن یونیورسٹی صوابی میں بے قاعدگیوں، وائس چانسلر کے اختیارات کے غلط استعمال اور غیرقانونی بھرتیوں پر انکوائری کی جس کے بعد گورنر خیبرپختونخوا شاہ فرمان نے ویمن یونیورسٹی صوابی کی وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر شاہانہ عروج کو جبری رخصت پر بھیج دیا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ جے آئی ٹی انکوائری رپورٹ میں وائس چانسلر ویمن یونیورسٹی صوابی ڈاکٹر شاہانہ عروج کے خلاف الزامات اور یونیورسٹی میں بے قاعدگیوں کے الزامات درست ثابت ہوئے۔

گورنر انسپکشن ٹیم نے اپنی انکوائری رپورٹ گورنر خیبرپختونخوا کو پیش کی تھی۔

گورنرخیبرپختونخوا نے جے آئی ٹی انکوائری رپورٹ کی سفارشات کی روشنی میں وائس چانسلر ڈاکٹرشاہانہ عروج کوجبری رخصت پربھیجنے کی باقاعدہ منظوری دی۔

گورنر کی منظوری کے بعد ڈکٹرشاہانہ عروج کو 90دن کی جبری رخصت پربھیج دیا گیا ہے جس کا محکمہ ہائرایجوکیشن خیبر پختونخوا نے باقاعدہ اعلامیہ جاری کر دیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں