The news is by your side.

Advertisement

برطانیہ: انگریزی اور ریاضی مضامین میں فیل ہونے والوں کو یونیورسٹی میں داخلہ نہ دینے کی سفارش

مانچسٹر: برطانوی محکمہ تعلیم کے سیکریٹری گیون ولیم سن نے سفارش کی ہے کہ لازمی اور بالخصوص ریاضی و انگریزی مضامین میں کامیابی حاصل نہ کرنے والے طلبہ کو یونیورسٹی میں داخلہ نہ دیا جائے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق برطانیہ کے سیکریٹری تعلیم گیون ولیم سن نے کہا کہ وہ یہ سمجھنے سےقاصر ہیں کہ لازمی مضامین پاس نہ کرنے والے طلبہ کے لئے یونیورسٹی میں داخلے کی شرائط کو کیوں نرم کیا جارہا ہے۔

انہوں نے مطالبہ کیا کہ برطانیہ میں جی سی ایس ای میں ناکام ہونے والے طلبہ کے پاس ہونے تک اُن کے یونیورسٹی میں داخلے پر پابندی عائد کرنے پر غور کیا جارہا ہے۔

گیون ولیم سن کا کہنا تھا کہ ’ اسکول سے فارغ ہونے والے اُن طلبہ کو یونیورسٹی میں جانے سے روکا جاسکتا ہے جنہوں نے انگریزی اور ریاضی کے مضامین پاس نہیں کیے‘۔

 انہوں نے یونیورسٹی میں داخلےکے لیے خواندگی کا معیار کم کرنے کو ناقابلِ قبول قرار دینے کا مطالبہ بھی کیا۔ سیکرٹری تعلیم نے ہایئر ایجوکیشن پالیسی انسٹی ٹیوٹ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ‘ہم یونیورسٹی داخلے میں بھی اسی طرح کی سختی کی توقع کرتے ہیں جیسا کہ ہم اعلی تعلیم کے ہر دوسرے شعبے سے کرتے ہیں‘۔

گیون نے سوال کیا کہ ’ کیا واقعی یہ کسی کے مفاد میں ہے اگر یونیورسٹی داخلے کی پالیسی کو اس قدر نرم کردیا جائے کہ انگریزی یا ریاضی میں ناکام ہونے والے اٹھارہ سالہ طالب علم کو گریجویشن یا آنرز کی ڈگری کے لیے داخلہ دے دیا جائے‘؟۔

اُنہوں نے کہا کہ ہمیں اس بات کو یقینی بنانا ہو گا کہ یونیورسٹی میں داخلہ اُنہی کو ملےجو اس کے معیار پر پورا اُترتے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں