The news is by your side.

Advertisement

علی امین گنڈا پور نے جوتا اچھالنے والے نوجوان کو معاف کردیا

باغ: وفاقی وزیر برائے امور کشمیر و گلگت بلتستان علی امین گنڈا پور نے  جوتا پھنکنے والے نوجوان کو معاف کرتے ہوئے پولیس سے اُسے رہا کرنے کی اپیل کردی۔

آزاد کشمیر کے علاقے باغ میں خطاب کے دوران نوجوان نے علی امین گنڈا پور پر جوتا پھینکا، جو خوش قسمتی سے ڈائس پر آکر لگا۔

پولیس نے اس ناخوشگوار واقعے کی تحقیقات کرتے ہوئے واقعے میں ملوث نوجوان کو گرفتار کی۔ تفتیشی افسر نے بتایا کہ جوتا ڈائس پر لگا اور علی امین گنڈا پور محفوظ رہے تھے۔

پولیس کی جانب سے گرفتاری کے بعد علی امین گنڈا پور نے نوجوان کو معاف کر کے اُسے رہا کرنے کی اپیل کردی۔ اپنے بیان میں وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ ’نوجوان کوکسی نےپیسےدے کریہ کام کرایا، پولیس اس کوچھوڑ دے‘۔

وزیرامورکشمیرعلی امین گنڈا پورپرجوتاپھینکنے والےنوجوان زرنوش نسیم کے خلاف تھانہ باغ میں مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں: آزاد کشمیر میں علی امین گنڈا پور پر جوتا پھینک دیا گیا

دوسری جانب وزیراعظم آزادکشمیر فاروق حیدر نے علی امین گنڈاپورپرجوتا اچھالنےکی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ’آزاد کشمیر میں سیاسی رواداری اپنی مثال آپ رہی ہے، اس طرح کے واقعات سب کے لیے نقصان دہ ہیں‘۔

انہوں نے کہا کہ ’آزادکشمیر ایسے واقعات کا متحمل نہیں ہوسکتا، واقعہ قابل مذمت ہے، تمام سیاسی جماعتوں کو اس کے خلاف آواز بلند کرنی چاہیے، تحمل، برداشت، رواداری ہمارےکلچر ثقافت کا حصہ ہے‘۔

Comments

یہ بھی پڑھیں