The news is by your side.

Advertisement

نیند میں‌ خراٹے کس بیماری کی وجہ ہیں؟

نیند میں خراٹے لینا ایک عمومی مسئلہ ہے جو آپ کو نیند کی کمی کا شکار بھی کردیتا ہے۔

سونے کی حالت میں خراٹے لینا دراصل ایک بیماری ہے، جسے طب کی زبان میں اپنیا کہا جاتا ہے۔ ماہرین کے مطابق سوتے ہوئے سانس رکنے کے عمل کی وجہ سے خراٹے نکلتے ہیں۔

امریکا کے ماہرین نے اب اپنیا نامی بیماری سے متاثر ہونے کی بنیادی وجہ تلاش کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

امریکا میں ہونے والی تحقیق کے نتائج طبی جریدے یورپین ریسیپٹری جرنل میں شائع ہوئے۔ تحقیق کے دوران 10 سے اٹھار سال تک کی عمر کے ایک لاکھ 36 ہزار سے زائد شہریوں کی صحت اور جسمانی سرگرمیوں کا جائزہ لیا گیا۔

مزید پڑھیں: خراٹوں سے چھٹکارے کے لیے گھریلو ٹوٹکے

جس میں ماہرین نے بتایا کہ ٹی وی اسکرین کے سامنے روزانہ کئی گھنٹے گزارنے سے اپنیا کا خطرہ بڑھ جاتا ہے۔

ہاورڈ کے تحقیقی ماہرین نے بتایا کہ ’ٹی وی کے سامنے چار گھنٹے سے زائد وقت گزارنے والا اپنیا کا شکار ہوسکتا ہے‘۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ اپنیا کا شکار افراد کو نیند کے دوران خراٹوں سمیت دیگر طبی پیچیدگیوں کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

تحقیق میں یہ بات سامنے آئی کہ دن بھر میں زیادہ وقت بیٹھ کر گزارنے والے افراد کو چہل قدمی کو یقینی بنانا چاہیے ورنہ وہ نیند میں خراٹوں کا شکار ہوسکتے ہیں۔

ماہرین کے مطابق دنیا بھر میں 30 سے 69 سال کی عمر کے ایک ارب کے قریب افراد معتدل سے سنگین سلیپ اپنیا کا شکار ہیں کیونکہ ایسے افراد کی جسمانی سرگرمیاں کم ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: خراٹوں سے نجات کیلئے برقی آلات متعارف

تحقیقی ماہرین نے بتایا کہ ہر شخص کو ہفتے میں کم از کم 150 منٹ جسمانی سرگرمیاں عمل دینی چاہیں، دن بھر میں 7 گھنٹے نیند اور ٹی وی کے سامنے کم از کم وقت گزارنا چاہیے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں