The news is by your side.

Advertisement

’پھٹے ہوئے سویٹر‘ کی قیمت آپ کے ہوش اُڑا دے گی

سردی سے بچنے کے لیے سویٹر تو سب ہی لوگ زیب تن کرتے ہیں لیکن کیا آپ نے کبھی پھٹا ہوا سویٹر پہنا ہے یقیناً آپ کا جواب نفی میں ہی ہوگا۔

لیکن اٹلی میں مہنگے کپڑے بنانے والی ایک کمپنی نے پھٹے ہوئے سویٹر پیش کردئیے جن کی قیمت 1450 ڈالر یعنی ڈھائی لاکھ پاکستانی روپے کے قریب ہے۔

بیلنسیاگا نامی کمپنی کے تیار کردہ سویٹروں کو دیکھ کر لگتا ہے جیسے وہ بہت پرانے ہوں، انہیں چوہوں نے جگہ جگہ سے کتر دیا ہو اور وہ جگہ جگہ سے ادھڑے ہوئے ہیں۔

کمپنی کا دعویٰ ہے کہ سویٹر آرام دہ ہیں جنہٰں بھیڑوں سے پہلی بار اتاری گئی خالص اُون سے تیار کیا گیا ہے۔

پچھلے سال بھی اٹلی کے مشہور برانڈ ’’گوچی‘‘ نے ’’غمزدہ جینز‘‘ پیش کی تھی جس کی قیمت سوا لاکھ روپے سے زیادہ تھی۔

ان پھٹے ہوئے مہنگے سویٹروں کو دیکھ کر سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے تنقید کی جارہی ہے۔

ان صارف نے تنقید کرتے ہوئے لکھا کہ ’آپ بیوقوف نہیں بناسکتے یہ سویٹر آثار قدیمہ ہیں جو کھدائی کے دوران برآمد ہوئے ہیں اور آپ نے ان کی قیمت 1450 ڈالر رکھ دی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں