The news is by your side.

Advertisement

رحیم اللہ یوسف زئی:’معزز ترین صحافیوں میں سے ایک تھے، صحافت کا ایک عہد ختم ہوگیا‘

اسلام آباد: عالمی شہرت کے حامل پاکستانی صحافی اور سینئر تجزیہ نگار 67 برس کی عمر میں انتقال کرگئے، وزیر اعظم عمران خان نے  افغان امور کے ماہر تجزیہ نگار رحیم اللہ یوسف زئی کے انتقال پر افسوس کا اظہار  کیا ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق گزشتہ کئی روز سے علیل سینئر رحیم اللہ یوسف زئی انتقال کرگئے۔ اہل خانہ کے مطابق اُن کا نماز جنازہ کل گیارہ بجے مردان کاٹلنگ انذرگئی نزد سوات ایکسپریس وے  کاٹلنگ انٹرچینج خان ضمیر بانڈہ میں  ادا کی جائے گی۔

وزیراعظم عمران خان نے سینئر صحافی کے انتقال پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ’رحیم اللہ یوسف زئی  پاکستان کے معزز ترین صحافیوں میں سے ایک تھے، وہ اچھے  رائےساز تھے جو اپنی تحقیق مکمل کرنے کے بعد تجزیہ لکھتے تھے‘۔

وزیراعظم عمران خان نے رحیم اللہ یوسف زئی کے اہل خانہ سے تعزیت اور مرحوم کی مغفرت کے لیے دعا بھی کی۔

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے رحیم اللہ یوسف زئی کے انتقال پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ’آج صحافت کا ایک عہد ختم ہوگیا ہے‘۔

فواد چوہدری نے کہا کہ ’افغانستان اور ہمارے سرحدی علاقوں کے معاملات پر رحیم اللہ یوسف زئی کی جو گرفت تھی وہ شائد ہی کسی اور کا خاصہ بن سکے‘۔ وفاقی وزیر نے دعا کی کہ خدا انہیں کروٹ کروٹ جنت نصیب کرے اور پسماندگان کو صبر دے۔

علاوہ ازیں وزیراعلیٰ پنجاب نے سینئرصحافی رحیم اللہ یوسفزئی کےانتقال پر افسوس کا اظہار کیا اور سوگواران سے دلی ہمدردی و تعزیت کی۔

عثمان بزدار نے  رحیم اللہ یوسفزئی کی صحافتی خدمات کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ اُن کا انتقال صحافت کے لیے ناقابلِ تلافی نقصان ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں