The news is by your side.

Advertisement

لاش جلتے جلتے رک گئی، 3 دن پڑی رہی، شمشان گھاٹ‌ کا دل دہلا دینے والا واقعہ

بھارت کے مغربی علاقے میں قائم شمشان گھاٹ میں آخری رسومات کے دوران دل دہلا دینے والا واقعہ پیش آیا ہے۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق مغربی ریاست کے علاقے بھولا نگر کمپلیکس میں 62 سالہ موہن وسنت کی لاش کو آخری رسومات کے لیے شمشان گھاٹ لایا گیا۔

میونسپل ملازمین کے مطابق آخری رسومات کے دوران جب لاش کو بھٹی میں ڈالا گیا تو گیس ختم ہوگئی جس کی وجہ سے لاش آدھی جل سکی اور تین دن تک معاملہ حل نہ ہوا۔

شمشان گھاٹ کے عملے کو جب اس معاملے کا علم ہوا تو انہوں نے گیس سلینڈر کی فراہمی کے لیے سینئر افسران سے رابطہ کیا مگر ادارے کے افسران نے وقت پر اقدامات نہ کیے۔

بھارتیہ جنتا پارٹی کے رہنما اوم پرکاش گڑودیا نے میونسپل انتظامیہ کی کارکردگی پر سوال اٹھاتے ہوئے عملے پر سنگین الزامات عائد کیے۔

مزید پڑھیں: بھارت : نوسالہ دلت بچی کا شمشان گھاٹ میں اجتماعی زیادتی و قتل

سٹی انجینئر شیواجی برکنڈ نے معاملے کی تحقیقات کی یقین دہانی اور قصور واروں کے خلاف سخت کارروائی کی یقین دہانی کرائی ہے۔

میڈیا کو موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق میونسپل پبلک ڈیم ورکس کے ایگزیکٹو انجینئر دیپک کھمبٹ کو 26 اگست کو ایک لکھا گیا تھا ، جس میں انہیں آگاہ کیا تھا کہ اگلی سماعت تک شمشان گھاٹ میں گیس سلنڈر فراہم نہ کیا جائے لیکن ٹھیکیدار کو یہ نہیں بتایا گیا کہ سپلائی روکنے کی وجہ کیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں