The news is by your side.

Advertisement

وزیراعظم کے ریلیف پیکیج پر بلاول بھٹو کا ردعمل آگیا

لاڑکانہ: چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو کا کہنا ہے کہ وزیراعظم کا ریلیف پیکیج مذاق کے سوا کچھ نہیں ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے ریلیف پیکیج پر بلاول بھٹو نے ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نے دعویٰ کیا کہ کچھ خاندان 30 فیصد رعایت سے مستفید ہوں گے، کچھ خاندانوں کو چھ ماہ کے لیے رعایت پر تیل، آٹا اور دالیں ملیں گی۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ غربت سے دوچار 20 کروڑ افراد کے لیے 30 فیصد رعایت انتہائی کم ہے، 3 سال میں گھی 108 فیصد، آٹا 50 فیصد، گیس 300 فیصد ہوئی ہے۔

مریم اورنگزیب کا وزیراعظم سے مستعفی ہونے کا مطالبہ

دوسری جانب مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب نے وزیراعظم کے پیکیج کو فراڈ پیکیج قرار دیتے ہوئے مستعفی ہونے کا مطالبہ کردیا۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان نے ریلیف پیکیج نہیں تکلیف پیکیج کا اعلان کیا ہے، یہ عوام کے لیے تاریخی پیکیج نہیں بلکہ تاریخی دھوکا ہے۔

مزید پڑھیں: وزیراعظم نے 120 ارب روپے کے ریلیف پیکیج کا اعلان کردیا

مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران خان کا تکلیف پیکیج عوام کے لیے مہنگائی کا نیا تباہ کن طوفان ہوگا، اگلے چھ ماہ مزید مہنگائی، بیروزگاری، معاشی تباہی بڑھے گی یہ ریلیف پیکیج ہے۔

انہوں نے سوال کیا کہ آٹا، چینی، بجلی، پیٹرول مزید مہنگے ہوں گے یہ آپ کا ریلیف پیکیج ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل وزیراعظم عمران خان نے مہنگائی میں پسے عوام کے لیے ‏‏120ارب روپے کے پیکیج کا اعلان کیا تھا، جس سے13کروڑلوگ مستفید ہوں گے، 6ماہ تک پیکج کےتحت گھی،آٹا،،دال کی قیمت میں ‏‏30فیصد رعایت میں ملےگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں