The news is by your side.

مرغے کی بانگ سے تنگ جوڑے کا عدالت جانے کا فیصلہ

جرمنی میں  ایک جوڑے نے پڑوسی کے مرغے کی بانگوں سے تنگ آکر  عدالت سے رجوع کرنے کا فیصلہ کرلیا۔

جرمنی کے قصبے بید سل زفلین میں ایک رہائشی جوڑا اپنے پڑوسی کے مرغے سے  تنگ ہے کیوں کہ اس کی بانگوں نے ان کی زندگی عذاب کردی ہے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق 76 سالہ فریڈرک اور ان کی اہلیہ جوٹا کا کہنا ہے کہ ان کے پڑوسی کا مرغا دن میں تقریباً 200 بار بانگیں دیتا ہے جس کی وجہ سے ان کا سکون برباد ہوچکا ہے۔

اس لیے ہم نے کئی وارننگ کے بعد اب مرغے سے جان چھڑوانے کیلئے  پڑوسی کے خلاف عدالت میں جانے کا فیصلہ کیا ہے۔

جوڑے کے مطابق مرغے کی بانگوں کے شور کی وجہ سے  وہ گھر کے باغیچے میں نہیں بیٹھ سکتے یہاں تک کہ اپنے گھر کی کھڑکیاں بھی بند رکھتے ہیں،ان کے بچے بھی اس آواز سے تنگ آچکے ہیں۔

فریڈرک اور ان کی اہلیہ کا کہنا ہے کہ ہم  نے اور دیگر پڑوسیوں نے بھی مرغے کے مالک سے کئی بار شکایت کی پر اس نے ہماری ایک نہ مانی اور مرغے کو اپنے پاس ہی رکھا۔

رپورٹس کے مطابق جوڑے نے مرغے کی بانگیں ریکارڈ بھی کی ہیں تاکہ وہ عدالت میں اسے پیش کرسکے ۔

دوسری جانب مرغے کے مالک مائیکل کا کہنا ہے کہ میرے باغیچے اور مرغیوں کے لیے یہ مرغا بہت ضروری ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں