site
stats
پاکستان

چھٹا پاک بھارت مکالمہ: شرکاء کا تعلقات کی بہتری پراتفاق

نئی دہلی : چھٹا پاک بھارت مکالمہ دہلی میں اختتام پذیرہوگیا ہے جس میں پاکستان اور بھارت کی حکومتوں کے لئے قرارداد بھی تشکیل دی گئی جس میں دونوں ممالک کی حکومتوں کے لئے دو طرفہ تعلقات بہتربنانے کے لئے تجاویز دیں گئیں۔

چھٹے پاک بھارت مکالمے کا انعقاد بھارت کے سنٹر فار ڈائیلاگ اینڈ ری کنسی لئیشن اور پاکستان کے جناح انسٹی ٹیوٹ کے اشتراک سے ہوا۔ یہ کانفرنس گزشتہ چھ سال سے منعقد ہورہی ہے جس کا مقصد ٹریک ٹو ڈپلومیسی کے ذریعے پاکستان اور بھارت کے درمیان امن کو فروغ دینا ہے۔

کانفرنس میں دونوں جانب سے سینئرممبران پارلیمنٹ، سفارت کار، سینئرمیڈیا شخصیات اور پالیسی ایکسپرٹس شریک ہوتے ہیں۔

کانفرنس کے شرکا نے پاکستان اور بھارت کے درمیان خراب ہوتے تعلقات اور دو طرفہ مذاکراتی عمل کی عدم موجودگی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ حالات میں مذاکرات کی شدید ضرورت ہے۔

شرکا نے لائن آف کنٹرول کی باربار ہونے والی خلاف ورزی اور اس کے سبب ہونے والی اموات پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

پاکستان کی جانب سے کانفرنس میں شریک ہونے والے وفد میں شیری رحمانم عزیز احمد خان، شفقت کاکا خیل، سلمان بشیر، شاہ غلام قادر، زاہد حسین، سلیم خان اورماروی سرمد مکالمے میں حصہ لیا۔

بھارت کی جانب سے وجاہت حبیب اللہ، سلمان حیدر، ایس کے لامبا، ستیابراتا پال، ایم یوسف، سدھارتھ، ریکھا چوہدری، سیما مصطفیٰ، گوہر گیلانی اورسشوبھا باروے نے مکالمے میں شرکت کی۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top