انقرہ: ترک فورسز پر بم حملہ، 7 اہلکار ہلاک، 3 زخمی 7-turkish-soldiers-killed
The news is by your side.

Advertisement

انقرہ: ترک فورسز پر کرد باغیوں کا بم حملہ، 7 اہلکار ہلاک، 3 زخمی

انقرہ : ترکی کے کرد اکثریتی صوبے میں سڑک کنارے نصب بم پھٹنے سے سات فوجی ہلاک جبکہ تین زخمی ہوگئے جنہیں اسپتال میں طبی امداد دی جارہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ترکی کے کرد اکثریتی جنوب مشرقی صوبے میں سڑک کنارے نصب بم اچانک پھٹ گیا جس کے نتیجے میں 7 ترک فوج کے اہلکار ہلاک جبکہ تین زخمی ہوگئے بم دھماکے میں زخمی اہلکاروں کو فوری طور پر طبی امداد کے لیےاسپتال منتقل کردیا گیا تھا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے ترک فورسز پر گرکس ٹاؤن میں حملہ ہوا تھا جو کرد اکثریتی صوبے بطمان کا علاقہ ہے۔

حکمران پارٹی کے ڈپٹی چیئرمین نعمان کرتولمس کا کہنا ہے کہ متاثرہ فوجی ملٹری گاڑی کے اندر موجود کو علاقے کے تعمیراتی حصّے کی حفاظت کے لیے جارہے تھے۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی انادولو کا کہنا ہے کہ ترک فورسز باغی کرد گروپ کے خلاف آپریشن کرنے کے لیے جارہی تھی۔

مقامی میڈیا کا کہنا ہے کہ بم دھماکے کے نتیجے میں 4 فوجی موقع پر ہی ہلاک ہوگئے تھے جبکہ تین اہلکار اسپتال میں دوران علاج زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ہلاک ہوئے ہیں جبکہ تین زخمی ہیں، ترک حکام حالیہ حملے کو کرد باغیوں کی کارروائی قرار دے رہے ہیں۔

غیر ملکی نیوز ایجنسی کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی فورسز ترک فضائیہ کے ہمراہ بم دھماکے کے بعد علاقے کو گھیرے میں لے کر بڑے پہمانے پر سرچ آپریشن کا آغاز کردیا ہے۔

مقامی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ کالعدم ’کردستان ورکر پارٹی‘ گذشتہ تین دہائیوں سے ترکی کے جنوب مشرقی علاقے میں اپنی کارروائیاں جاری رکھے ہوئے ہے، سنہ 1984 سے شروع ہونے والے تنازعے میں اب تک دسیوں ہزار افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

ترک حکام کا کہنا ہے کہ دو روز قبل فورسز کی جانب سے کرد باغیوں کے ٹھکانوں پر کارروائی کی گئی تھی جس کے نتیجے میں 13 کرد باغی ہلاک ہوئے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں