site
stats
پاکستان

عبداللہ شاہ غازی کے ہوتے کوئی طوفان کراچی نہیں آسکتا

کراچی: نیلوفر طوفان کے آنے کی خبر ہر زبان پر ہے، ہرکوئی اس کے آنے یا نہ آنے پر اپنی رائے دے رہا ہے، کراچی میں لوگوں کا ایک طبقہ سمجھتا ہے کہ جب تک عبداللہ شاہ غازی کا مزارموجود ہیں کوئی طوفان کراچی کو نقصان نہیں پہنچا سکتا۔

کراچی میں ہرطرف اگر کسی کانام زبان زد عام ہے تو وہ نیلو فر کا نام ہے، جو کسی سپراسٹار کانام نہیں بلکہ یہ اُس طوفان کا نام ہے جس سے تباہی اور بربادی کے وسیع امکانات جُڑے ہیں مگر کراچی میں ایسے لوگوں کی بھی ایک بڑی تعداد ہے، جنہیں یقین ہے کہ یہ طوفان کراچی کا کچھ نہیں بگاڑ سکتا کیونکہ کراچی کے ساحل پر عبداللہ شاہ غازی کا مزار ہے، جس کے ہوتے ہوئے کوئی طوفان کراچی کا رخ نہیں کر ے گا۔۔

روایت کے مطابق کئی صدیاں پہلے ساحل سمندر پر واقع کراچی کو طوفانی ہواؤں اور بادو باراں نے گھیرا ہوا تھا، تبھی حضرت عبداللہ شاہ غازی نے پہاڑی پر کھڑے ہوکر کہا رک جاؤ اور طوفان رک گیا۔

کراچی کے بیشتر شہری سمجھتے ہیں کہ وہ دن اور آج کا دن طوفان کراچی کا رخ نہیں کرتا، اس روایت کی حقیقت کیا ہے یہ تو کوئی تاریخ دان ہی بتا سکتا ہے مگر تاریخی حقائق کے مطابق سال انیس سو دو ، انیس سو سات ، انیس سوچوالیس،اور انیس سوپچاسی میں طوفانوں نے کراچی آتے آتے اپنا رخ تبدیل کر لیا تھا۔

پھر سال دو ہزار نو میں سائیکلون فائین اور سال دوہزار دس سائیکلون فیٹ نے بھی کراچی کے قریب آکراپنا رخ موڑ لیا تھا، کراچی والوں اب بھی امید یے کہ بزرگوں کی دعاؤں سے کراچی نیلوفر سے ایک بار پھر بچ جائے گا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top