The news is by your side.

Advertisement

بھارت لاک ڈاؤن، شراب نہ ملنے پر شہری سینیٹائزر پی گئے، 10 ہلاک

ممبئی: بھارت میں کرونا لاک ڈاؤن کے دوران شراب نہ ملنے پر نشے کے عادی افراد نے گھریلو ساختی سینیٹائزر پیا لیا جس کی وجہ سے 10 شہری ہلاک ہوگئے۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق بھارت کی پولیس نے جمعے کے روز تصدیق کی کہ شہر میں کرونا کی وجہ سے نافذ لاک ڈاؤن کے بعد شراب کی دکانیں بند ہیں۔

لاک ڈاؤن میں شراب نہ ملنے کے باعث نشے کے عادی افراد نے گھریلو ساختہ سینیٹائزر پیا جس کے بعد اُن کی حالت تشویشناک ہوئی ۔ آندھرا پردیش کے علاقے کورچیدو کے پولیس سپریٹنڈنٹ سدھارتھ کوشال کا کہنا تھا کہ ‘شراب نہ ملنے پر متاثرہ افراد نے بہت زیادہ مقدار میں سینیٹائزر اور سوڈے کا پانی پیا جس کی وجہ سے وہ بے ہوش ہوگئے تھے، متاثرہ افراد کو اسپتال منتقل کیا جارہا تھا تو وہ راستے میں دم توڑ گئے جس کی ڈاکٹرز نے بھی تصدیق کی ہے۔’

پولیس آفیسر کا کہنا تھا کہ ’متاثرہ افراد سینیٹائزر کو شراب کے متبادل کے طور پر استعمال کررہے تھے، مرنے والوں کی لاشوں کو ضابطے کی کارروائی کے بعد لواحقین کے حوالے کردیا گیا جبکہ پولیس نے واقعے کا مقدمہ درج کر کے تفتیش کا آغاز کردیا‘۔

آندھرا پردیش میں یہ 10 ہلاکتیں ایک ایسے وقت میں ہوئیں جب بھارت میں کرونا سے ہلاک ہونے والے افراد کی تعداد پینتیس ہزار سے تجاوز کرچکی ہے۔ بھارت اس وقت کرونا کیسز کے اعتبار سے دنیا بھر میں تیسرے نمبر پر ہے جہاں کرونا کیسز کی تعداد 16 لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں