site
stats
پاکستان

نواز مودی ملاقات، مودی آئندہ برس پاکستان کا دورہ کریں گے

اوفا: وزیراعظم نواز شریف اور بھارتی وزیراعظم کی روس کے شہر اوفا میں ملاقات کے دوران دوطرفہ تعلقات اور مسائل کے حل کے لئے بات چیت پراتفاق کیا۔

روس کےشہراوفامیں ہونےوالی شنگھائی تعاون تنظیم کےسربراہ اجلاس کے سائیڈ لائن پر وزیراعظم نوازشریف اور بھارتی وزیراعظم نریندرمودی کے درمیان ملاقات ہوئی۔

ملاقات میں دونوں ممالک کےدرمیان تناؤکی رسی ڈھیلی ہوتی نظرآئی جب دنیا نےکانگریس ہال میں مودی کووزیراعظم نوازشریف کی آمدکامنتظرپایا۔

مودی اپنی جگہ سےدوقدم آگےبڑھےاور نوازشریف سےمصا فحہ کیا۔ تیرہ سیکنڈ طویل مصافحہ میں بھارت کی پاکستان سےمذاکرات کی خواہش عیاں تھی۔ طے شدہ پینتالیس منٹ ملاقات کا اہتمام بھی بھارتی وزیراعظم کی خواہش پرکیاگیاجوایک گھنٹہ جاری رہی۔

دونوں رہنماؤں کے درمیان تنازعات کےتصفیہ طلب حل پربات چیت کی راہ ہموارکرنےپرتبادلہ خیال ہوا۔ اس سے پہلے دونوں وزیراعظم کی ملاقات گزشتہ سال مئی میں کھٹمنڈومیں ہوئی تھی

پاک بھارت وزرائے اعظم کی ملاقات کے بعد دونوں ممالک کی وزارتِ خارجہ کی جانب سے مشترکہ اعلامیہ جاری کیا گیا۔

پاکستان کے سیکریٹری خارجہ اعزازچوہدری نے کہا کہ نواز،مودی ملاقات خوشگوارماحول میں ہوئی۔ وزیراعظم نوازشریف نے نریندرمودی کو پاکستان کے دورے کی دعوت دی۔

بھارتی سیکریٹری خارجہ ایس جے شنکرنے کہا کہ نریندرمودی نے دورہ پاکستان کی دعوت قبول کرلی ہے اوروہ آئندہ سال پاکستان کا دورہ کریں گے۔

خارجہ سیکریٹریز کا کہنا تھا دونوں ممالک باہمی اورخطے کے استحکام کے لئے دہشت گردی کے خاتمے پرمتفق ہیں۔ دونوں ممالک ہرقسم کی دہشتگردی کی مذمت کرتے ہیں۔ پاکستان اوربھارت میں قید ماہی گیروں کورہا کرنے پربھی اتفاق کیا گیا۔

مذاکرات میں دونوں جانب سے درج ذیل امور پربھی اتفاق کیا گیا

دونوں ممالک کی نیشنل سیکیورٹی ایجنسیز نئی دہلی میں دہشت گردی سے ملحقہ تمام امور پر گفتگو کرنے کے لئے ملاقات کریں گی۔

ڈی جی پاکستان رینجرز اور ڈی جی بی ایس ایف کے درمیان ملاقاتیں ہوں گی۔

دونوں ممالک ماہی گیروں کو ان کی کشتیوں اور دیگر ساز و سامان سمیت 15 دنوں میں رہا کریں گے۔

مذہبی سیاحت کے فروغ کے لئے میکینزم وضع کیا جائے گا۔

طرفین نے ممبئی کیس پر ایک دوسرے کو مزید سہولتیں فراہم کرنے پراتفاق کیا گیا ہے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ سوشل میڈیا پر


#ModiAfraidofCPEC trends in Pakistan


Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top