The news is by your side.

Advertisement

کروناوائرس: امریکا کی مدد کے لیے ارب پتی شخص میدان میں آگیا

بیجنگ: دنیا کی مقبول ترین ای کامرس کمپنی ’’علی بابا‘‘ کے شریک بانی جیک ما کروناوائرس کے خلاف جنگ کے لیے میدان میں اترچکے ہیں۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق جیک ما نے سوشل میڈیا پر اعلان کیا ہے کہ ان کی ٹیم کروناوائرس سے لڑنے کے لیے امداد کے طور پر امریکا کو ایک ملین سرجیکل ماسک اور 5 لاکھ کروناوائرس ٹیسٹ کٹ فراہم کرے گی۔

وبائی مرض کروناوائرس کے تناظر میں امریکا اور چین کے درمیان لفظی گولہ باری بھی جاری ہے۔ دنوں ممالک ایک دوسرے کو کروناوائرس کی وجہ قرار دے رہے ہیں۔ چینی حکام نے دعویٰ کیا ہے کہ امریکی افواج سے کروناوائرس ووہان میں منتقل ہوا جبکہ امریکا کا کہنا ہے کہ یہ کرونا نہیں بلکہ ’’چینی وائرس‘‘ ہے۔

چین کے امیر ترین شہری جیک ما کا کہنا ہے کہ مذکورہ امداد فوری طور پر امریکا کو فراہم کرنے کے لیے اقدمات کیے جارہے ہیں، امید ہے یہ کروناوائرس کے خلاف جنگ میں معاون ثابت ہوگی۔

ایران کی مدد کے لیے ارب پتی شخص میدان میں آگیا

ان کا مزید کہنا ہے کہ کروناوائرس دنیا بھر میں بنی نوع انسان کے لیے ایک بہت بڑا چیلنج ہے، کوئی بھی ملک اکیلے اس مرض پر قابو نہیں پاسکتا، ہمیں ایک دوسرے کی مدد کرنا ہوگی۔

خیال رہے کہ جیک ما اس سے قبل ایران اور جاپان کی بھی مدد کرچکے ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں