The news is by your side.

Advertisement

لاہور: ایک اور ننھی کلی زیادتی کے بعد موت کے گھاٹ اتار دی گئی

لاہور: پنجاب میں ایک اور ننھی کلی موت کے گھاٹ اتار دی گئی، نو سالہ عائشہ کو مبینہ ذیادتی کے بعد پھندا دیکر قتل کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق یہ انسانیت سوز واقعہ پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں پیش آیا جہاں نو سالہ بچی کو مبینہ زیادتی کے بعد موت کے گھاٹ اتار دیا گیا۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ واقعہ لاہور کے علاقے لوہاری میں پیش آیا، 9 سالہ عائشہ کو مبینہ ذیادتی کے بعد قتل کیا گیا، ماموں طارق بابر اور تمجید کے زیر کفالت نو سالہ عائشہ کی گھر کی بالائی کمرے میں پھندا لگی لاش ملی۔

پولیس کے مطابق گھر میں اس وقت تمجید اور ایک اور خاتون موجود تھی، بچی کی والدہ عمرہ کی ادائیگی کے لیے گئی ہوئی تھی، قتل کا مقدمہ بچی کے والد محمد طارق کی مدعیت میں نامعلوم افراد کے خلاف درج کرلیا گیا ہے۔

ایف آئی آر کے مطابق میری بیوی بچوں کے ہمراہ اپنی والدہ کے گھر رہ رہی تھی، میری بیٹی کو گلا دبا کر قتل کیا گیا ہے۔

دوسری جانب ایس پی سٹی معاذ ظفر کھوکھر کا کہنا ہے کہ میڈیکل رپورٹ سے پتا لگا ہے کہ بچی کو زیادتی کے بعد قتل کیا گیا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ تحقیقات کے لیے اہل خانہ سے بھی پوچھ گچھ جاری ہے، بچی کے ماموں تمجید کو حراست میں لے لیا گیا ہے، تفتیش جلد مکمل کرلی جائے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں