site
stats
Uncategorized

امریکا، زیادتی کر کے خاتون کو قتل کرنے والا ملزم ڈی این اے کی مدد سےگرفتار

نیویارک : جنسی زیادتی کا نشانہ بنا کر امریکی خاتوں کو قتل کرنے والا ملزم چینل لیوس کو ڈی این اے کی مدد سے گرفتار کر لیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق 30 سالہ مقتولہ خاتون کرینا ویٹرانو کے ہاتھوں کے ناخنوں کے نیچے سے ملزم کے ملنے والے ڈی این اے ٹیسٹ کی مدد سے ملزم 20 سالہ چینل لیوس کو گرفتار کر کے تفتیشی عمل کا آغاز کردیا گیا ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ زیادتی کا نشانہ بننے والی مقتولہ کی پیٹھ اور موبائل فون سے بھی ڈی این اے کے نمونے حاصل کیے گئے اور انہیں میچ کیا گیا اور 911 کو کی گئی کال کی مدد سے مشتبہ شخص کو گرفتار کر کے اس کا ڈی این اے ٹیسٹ کیا گیا تو نتیجہ مثبت آیا جس کے بعد نوجوان کو حراست میں لے لیا گیا ہے


 ڈی این اے ٹیسٹ کیا ہوتا ہے اور کیوں کیا جاتا ہے؟


پولیس ذرائع کے مطابق اسپیچ تھراپسٹ 30 سالہ کرینا ویٹرانو نیویارک کے علاقے کوینز میں اپنے گھر کے قریب اکیلے جاگنگ کرتے ہوئے قتل کر دی گئی تھیں ان کے جسم پر تشدد کے نشانات تھے پوسٹ مارٹم سے ثابت ہوا تھا کہ مقتولہ کو زیادتی کے بعد گلا گھونٹ کر قتل کردیا گیا تھا۔

تفتیش کاروں کو خاتون کے ناخنوں کے نیچے اور پیٹھ پر موجود خلیوں سے ڈی این اے نمونہ مل گیا تھا جو کسی سے مل پا رہا تھا تاہم ہنگامی مدد سروس 911 کو کیے جانے والی فون کالز کی مدد سے پولیس نے 20 سالہ چینل لیوس کا پتہ چلا لیا اور ڈی این اے ٹیسٹ کیا تو وہ مثبت آگیا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

loading...

Most Popular

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top