جعلی نکاح ناموں کے ذریعے لاکھوں روپے بٹورنے والے گروہ کا انکشاف -
The news is by your side.

Advertisement

جعلی نکاح ناموں کے ذریعے لاکھوں روپے بٹورنے والے گروہ کا انکشاف

لاہور: پنجاب کے دل لاہور میں جعلی نکاح نامے بنا کر شہریوں سے لاکھوں روپے بٹورنے والے گروہ کا انکشاف ہوا ہے، گروہ میں سرکاری ملازمین بھی شامل ہیں۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں ایک ایسے گروہ کا پتا چلا ہے جو شہریوں کے نام سے جعلی نکاح نامے بنا کر ان سے لاکھوں روپے بٹور لیتے ہیں۔

لاہور کے ایک شہری محمد قاسم نے محکمہ اینٹی کرپشن کے ڈائریکٹر جنرل کو اس سلسلے میں ایک درخواست دی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ مذکورہ گروہ نے اسے ٹھگنے کی کوشش کی۔

شکایت پر مبنی درخواست میں الزام لگایا گیا ہے کہ جعلی نکاح ناموں کے ذریعے لاکھوں روپے بٹورنے والے گروہ میں سرکاری ملازمین، سیکریٹری یونین کونسل اور دیگر افسران بھی ملوث ہیں۔

درخواست گزار محمد قاسم نے کہا کہ افسران و ملازمین نے ان کی دوسری شادی کے نکاح نامے میں رد و بدل کی، اس رد و بدل کے ذریعے ان سے دس لاکھ روپے اور جائیداد قبضہ کرنے کی کوشش کی گئی۔

شہری نے درخواست میں الزام لگایا کہ یو سی 44 کے سیکریٹری نے ان کی دوسری بیوی کے ساتھ مل کر ان کے نکاح نامے میں ٹمپرنگ کی ہے۔

مجھے بلیک میل کرنے کے لئے جعلی نکاح نامہ بنایا گیا، اداکارہ میرا


شہری محمد قاسم نے درخواست میں کہا کہ لاکھوں روپے اور میری جائیداد بٹورنے کی کوشش میں ملوث افراد کے خلاف اینٹی کرپشن کو درخواست بھی دی لیکن کوئی شنوائی نہیں ہوئی۔

ڈی جی محکمہ اینٹی کرپشن کو دی جانے والی درخواست میں شہری کی طرف سے کہا گیا ہے کہ مذکوہ گروہ میں نکاح رجسٹرار اور نکاح خواں بھی شامل ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں