The news is by your side.

منشیات فروخت کرنے سے کیوں روکا؟ سرعام مسلم نوجوان قتل

ممبئی: منشیات کے کاروبار کی مخالف کرنے کی پاداش میں مسلم نوجوان کو موت کے گھاٹ اتاردیا گیا۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق افسوسناک واقعہ ریاست مغربی بنگال میں پرگنہ کے بیرکپور میں جگتدل تھانہ تحت کے بھاٹ پاڑہ علاقے میں پیش آیا۔

جہاں مسلم نوجوان جبار انصاری نامی شخص کو علاقے میں منشیات کے غیر قانونی دھندے کی مخالفت کرنے پر شرپسندوں نے دیہاڑے گولی ماردی۔

واقعے میں مسلم نوجوان شدید زخمی ہوا ، جسے طبی امداد کے لئے فوری طور پر قریبی اسپتال منتقل کیا گیا، جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق منشیات فروشوں کے ہاتھوں مسلم نوجوان کی ہلاکت پرعلاقے میں سنسنی پھیل گئی، واقعے کے خلاف مسلم شہریوں نے جگتدل،بھاٹ پاڑہ اور کانکی نارہ میں احتجاج کیا اور ٹریفک کو مکمل بند کردیا۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق پولیس نے جائے وقوع پر پہنچ کر حالات کا جائزہ لیا، ابتدائی تفتیش کے بعد پولیس نے کہا کہ واقعے کی تحقیقات جاری ہے، فائرنگ میں ملوث شرپسندوں کی تلاش جاری ہے، لیکن ابھی تک کسی کی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: تصویر سوشل میڈیا پر کیوں شیئر کی؟ بھارت میں ایک اور مسلم نوجوان قتل

واضح رہے کہ بھارت کے دوبارہ برسراقتدار آنے کے بعد سے ہی بیرکپور بالخصوص جگتدل،بھاٹ پاڑہ اور کانکی نارہ میں مسلم شہریوں پر حملے بڑھ چکے ہیں۔

گزشتہ ماہ بھی جمعہ کے دن نامعلوم شرپسندوں نے اقلیتی طبقے سے تعلق رکھنے والے ایک نوجوان کو گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں