The news is by your side.

Advertisement

دنیا کا حیرت انگیز تالاب، جو کبھی خشک نہیں ہوتا

پالیوال تہذیب کی علامت تاریخی جسیری تالاب جو کبھی خشک نہیں ہوتا۔

بھارتی راجھستان کے ضلع جیسلمیر کے ہیڈ کوارٹر سے پچاس کلو میٹر کی دوری پر کُلدھارہ خابا روڈ پر ڈیڑھا گاؤں میں واقع ہے، یہ تالاب تقریباً چار سو سال قبل دیور کے طعنے پر بھابھی کے والد نے کھدوایا تھا اسی لیے اس تالاب کا نام بھی بھابھی جسبائی کے نام پر ہی جسیری رکھا گیا ہے۔

تاریخ کے ماہرین کے مطابق جسیری تالاب میں پیتل کی چادر کی ایک پرت بچھائی گئی ہے اور جب سے یہ تالاب بنایا گیا ہے اس وقت سے ایک بار بھی یہ سوکھا نہیں ہے حالانکہ ایک بار سنہ 1971 میں شدید قحط پڑا تھا ، اس وقت اس تالاب کا پانی کم ہوا تھا لیکن اس کے بعد سے آج تک کسی نے اس کی تہہ نہیں دیکھی ہے، جسیری تالاب آس پاس کے درجنوں دیہات کی پیاس بجھاتا ہے۔زیر زمین پانی اور معدنیات کے ماہرین کے مطابق تالاب کے خشک نہ ہونے کی بہت سی وجوہات ہیں، تالاب ایسی جگہ بنایا گیا ہے جہاں آس پاس کی ندیوں کا پانی بہہ کر آتا ہے، تالاب میں پانی بھرنے کی گنجائش زیادہ ہے اور آس پاس سے بہہ کر آنے والے پانی کے ساتھ چکنی مٹی بھی آتی ہے جو تالاب کی تہہ میں ایک پرت کی طرح جمع ہوجاتی ہے اسی لیے اس تالاب کا پانی جلدی نہیں سوکھتا۔

صحرائی علاقوں میں بوند بوند پانی کی اہمیت ہے اور جسیری تالاب پانی کے تحفظ کی ایک عمدہ مثال ہے، اس تاریخی تالاب کی تصویر دہلی کے سائنس سینٹر بلڈنگ میں راجستھان کے روایتی پینے کے پانی کے وسائل کی ثقافت کو بیان کر رہی ہے۔ اس تالاب کو دیکھنے کے لیے سیاحوں کی بڑی تعداد یہاں آتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں