The news is by your side.

Advertisement

ناموربھارتی موسیقار اے آ ر رحمان کے خلاف فتویٰ جاری

ممبئی :  ناموربھارتی موسیقار اے آ ر رحمان  اور معروف ایرانی فلمساز ماجد مجیدی کے خلاف فتویٰ جاری کر دیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق ممبئی میں واقع سنی گروپ کی رضا اکیڈمی سے تعلق رکھنے والے مولانا حضرات کیجانب سے دونوں نامور شخصیات کے خلاف فتویٰ دیا گیا ہے، فتویٰ پیغمبر اسلام کی زندگی پر مبنی فلم بنانے کی وجہ سے لگایا گیا ہے۔

 فتوی میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ فلمساز ماجد مجیدی اور موسیقار اے آر رحمان اسلام کی بے حرمتی کے مرتکب ہوئے ہیں اس لئے انکا ایمان اور نکاح دونوں فسخ ہوچکے ہیں ، لہذا انھیں دائرہ اسلام میں داخل ہونے کے لئے دوبارہ کلمہ پڑھنا اور نکاح کرنا چاہیے۔

فتویٰ میں کہا گیا ہے کہ پیغمبر اسلامؐ  کا فرمان ہے کہ تصویر کشی اسلام میں حرام ہے۔

انکا کہنا ہے کہ فلمساز نے پیغمبر اسلام کی زندگی پر فلم بنا کر اسلام کا مذاق اڑایا ہے، علاوہ ازیں فلم کے اہم کرداروں میں غیرمسلم اداکاروں کو شامل کیا گیا ہے جو قابل مذمت ہے۔

مذہبی گروپ کی جانب سے بھارتی وزیرِ داخلہ راج ناتھ سنگھ اور مہاراشٹرا کے وزیراعلیٰ کو فتویٰ پر عملدرآمد کرانے کا حکم جاری کرنے کے لئے خط بھی لکھا گیا ہے۔

واضح رہے موسیقار اے آر رحمان نے فلم محمدؐ کی پس پردہ موسیقی ترتیب دی تھی۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں