The news is by your side.

Advertisement

لاہور،اچھرہ میں شوہر کے مبینہ تشدد سے بیوی جاں بحق

لاہور: اچھرہ میں شوہر اور سسرالیوں نے مبینہ طور پر تشدد اور زہر دے کر چھبیس سالہ حاملہ خاتون کو قتل کردیا ہے،جاں بحق خواتین کے والدین اور اہل خانہ تھانے کے باہر احتجاج کرتے ہوئے وزیراعلی پنجاب سے انصاف کی اپیل کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق رحمان پورہ کی رہائشی سندس فیاض کو مبینہ طور پر اپنے شوہر اور سسرالیون کے تشدد اور زہر دیے جانے کے باعث جاں بحق ہو گئی ہے،جاں بحق ہونے والی خاتون چھ ماہ کی حاملہ اور 26 سالہ خاتون تھیں

اہل محلہ کے مطابق مذکورہ خاتون کی شادی تین سال قبل اچھرہ کے رہائشی شہباز سے ہوئی تھی تا ہم دونوں کے درمیان آئے روز کا جھگڑا اور اکثر گھریلو ناچاقی رہنے لگی تھی۔

مقتول خاتون کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ شہبازاپنی بیوی کو میکے سے پیسے لانے پر مجبور کرتا رہتا تھا اورانکار پرتشدد کا نشانہ بناتا رہتا تھا جب کہ سسرالی بھی شہباز کا ساتھ دیتے اور اسے تشدد کا نشانہ بناتے رہتے تھے۔

سندس کے اہلخانہ نے مزید بتایا کہ کل شام پولیس نے اطلاع دی کہ سندس کو طبیعت خراب ہونے پر سروسز اسپتال لایا گیا تھا جہاں اس کا علاج جاری تھا کہ وہ اسپتال میں ہی دم توڑ گئی ہے۔

سندس کے اہل خانہ نے لالزام عائد کیا کہ ان کی بیٹی کو اس کے شوہر نے تشدد کے بعد زہر دے کر مارا ہے جس کی تحقیقات کے لیے وزیر اعلیٰ پنجاب سے مطالبہ کرتے ہوئے لواحقین نے تھانہ اچھرہ کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا اور پولیس کے خلاف نعرے بازی بھی کی۔

بعد ازاں علاقہ مکینوں کی مداخلت پر قتل کا مقدمہ درج کر لیا گیا،جاں بحق ہونے والی سندس کے والد شیخ فیاض نے بیٹی کے قتل کا مقدمہ درج کروانے کے لیے دادما شہباز،اسکی والدہ رقیہ اور بھائی اعجاز چوہان کے خلاف درخواست جمع کروادی ہے۔

اچھرہ پولیس نے سندس فیاض کی لاش کو قبضے میں لیکر پوسٹ مارٹم کیلئے مردہ خانے منتقل کردیا ہے جہاں رہورٹ آنے کے بعد تحقیقات کے دائرہ کار کو بڑھایا جائے گا

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں