The news is by your side.

Advertisement

‘مقبوضہ کشمیر میں صحافیوں کا کام کرناجہنم جیسا ہے’بھارتی جارحیت کا پردہ چاک

پیرس : آزادی صحافت کے لیے کام کرنے والی تنظیم رپورٹرز ود آؤٹ بارڈرز نے مقبوضہ وادی میں بھارتی جارحیت کا پردہ چاک کردیا اور کہا ایک سال میں مقبوضہ کشمیر میں صحافیوں کا کام کرناجہنم جیسا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مودی سرکار پر مقبوضہ کشمیر میں آزادی صحافت کی خلاف ورزی پرتنقید کاسامنا ہے، رپورٹرز ود آؤٹ بارڈرز نے مقبوضہ وادی میں بھارتی جارحیت کا پردہ چاک کردیا۔

رپورٹرزودآؤٹ بارڈرز کا کہنا ہے کہ ایک سال میں مقبوضہ کشمیر میں صحافیوں کا کام کرناجہنم جیسا ہے ، مقبوضہ کشمیرمیں صحافیوں کیساتھ بدترین سلوک کیا جاتاہے۔

آزادی صحافت کے لیے کام کرنے والی تنظیم کے مطابق بھارتی فورسز کام میں مداخلت کرتی ہے، صحافیوں کو ہراساں اور کام کرنے سےروکتی ہے ، خبروں کو کنٹرول کیا جاتا ہے ، ویڈیو بنانے میں رکاوٹیں ڈالی جاتی ہیں۔

رپورٹرزودآؤٹ بارڈرز نے مزید کہا کہ بھارتی اقدام کوایک سال ہونےپرسرینگرسنسان تھا، 5اگست کو سرینگر کی سڑکوں پر بھارتی فورسز کے علاوہ کوئی نہ تھا، بھارتی حکومت نےیہ پالیساں ختم نہیں کی تویہ تاریخ کاحصہ بنے گا۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ وادی میں طویل کرفیوہے،غیر ملکی رپورٹرز کودور رکھا گیا ہے ، 5اگست کشمیریوں کیلئے افسوسناک دن ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں