The news is by your side.

Advertisement

ایبٹ آباد کی آبشار جھیل- کیا آپ اس حسین نظارے سے لطف ہونا چاہیں گے؟

خیبرپختونخواء کے ضلع ایبٹ آبادکے بلند پہاڑوں سے بہنے والی ہزارہ آبشار جھیل ملکی غیر ملکی سیاحوں کی توجہ کا مرکز بن گئی ہے ۔

خیبر پختوخواء کے ضلع ایبٹ آباد تحصیل حویلیاں سے پچیس کلو میٹر کے فاصلے پر واقع علاقہ سجیکوٹ کی مشہور قدرتی جھیل جوہزارہ جھیل کے نام سے مشہور ہے۔

A-1

A-2

گرمیوں کا موسم شروع ہوتے ہی حویلیاں کے بلند پہاڑوں سے قدرتی چشمے سے بہنے والی ہزار جھیل کو دیکھنے کے لیے سیاحوں کا رش بڑھ جاتا ہے دو سو فٹ کی بلندی سے خوبصورت آبشار کامنظر پیش کرنے والی اس جھیل کو نہ صرف ملک بھر سے بلکے غیر ملکی سیاح بھی لطف اندوز ہونے کے لیے اس وادی کارخ کرتے ہیں۔

A-3

A-4

دو سو فٹ کی بلندی سے قدرتی چشموں سے تین آبشاریں بہتی ہیں جن تک پہنچنے کے لیے سیاحوں کو مشکل ترین پیدل سفر طے کرنا پڑتا ہے،خوبصورت دلفریب مناظر والی آبشارجھیل کے اطراف میں سر سبز جنگلات اور موسم گرما کے باغات شامل ہیں جہاں درختوں پر آڑو ،خوبانی اور آلو بخارئے کے پھل شامل ہیں ۔

A-5

یہاں آنے والے سیاحوں کا کہنا ہے کہ پہاڑوں کے دامن سے بہنے والی ہزارہ جھیل کا شمار پاکستان کے شمالی علاقہ جات کی حسین ترین جھیلوں میں ہوتا ہے یہاںآنے کے لیے دشوار گزار پہاڑی راستوں سے گزرنا پڑتا ہے۔ ہزار جھیل کے اطراف کی بلند پہاڑوں سے طلوع ہونے والےسورج کی کرنوں سے آبشارکے جھرنوں سے شفق کے کئی رنگ طلوع ہوتے ہیں جنھیں سیاح
اپنی یاد گار تصاویرمیں محفوظ کرکے اس جنت نظر وادی کی یادوں کو ہمیشہ کے لیے محفوظ کر لیتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں