The news is by your side.

Advertisement

آشیانہ ہاؤسنگ اسکینڈل: دوملزمان کے ریمانڈ میں توسیع، دوکوجیل بھجوادیا

لاہور: احتساب عدالت نے آشیانہ ہاؤسنگ سکینڈل میں احد چیمہ اور شاہد شفیق کے جسمانی ریمانڈ میں سات روز کی توسیع اور شریک دو ملزمان کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوا دیا۔

تفصیلات کے مطابق آشیانہ اقبال ہاوسنگ سکینڈل میں بیورو کریٹ احد چیمہ سمیت چار ملزمان کو احتساب عدالت میں پیش کیا گیا،نیب کے وکیل وارث جنجوعہ نے عدالت کو بتایا کہ احد چیمہ نے بطور ڈی جی ایل ڈی اے کاسا کمپنی کو پندرہ ارب روپے کا ٹھیکہ غیر قانونی طور پر دیا،جس کے عوض 32 کنال کا پلاٹ حاصل کیا جس کی تمام تر ادائیگی پیراگون سٹی کے اکاونٹ سے کی گئی۔

تحقیقات میں احد چیمہ اور ان کی فیملی کے نام بہت سی جائیدادیں اور بنک اکاونٹس سامنے آئے ہیں . احد چیمہ اہلیہ کے نام بھی 21 کنال زمین کے متعلق ثبوت حاصل کر لیے ہیں جس کی قیمت سات کروڑ ہے۔

جن لوگوں سے یہ زمین خریدی گئی انھیں بھی طلب کیا گیا ہے جبکہ احد چیمہ نے چار کروڑ کی سرمایہ کاری بھی کی جس کے سترہ ملین احد چیمہ نے ادا کیے اس حوالے سے بھی تحقیقات جاری ہیں ،ملزمان کے وکیل نے بتایا کہ 80 روزہ ریمانڈ کے باوجود نیب کوئی ثبوت پیش نہیں کر سکی،مزید ریمانڈ نہ دیا جائے۔

عدالت نے دلائل سننے کے بعد ملزم احد چیمہ اور شاہد شفیق کے جسمانی ریمانڈ میں سات روز کی توسیع جبکہ ملزم امتیاز حیدر اور بلال قدوائی کو چودہ روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوا دیا ہے ۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال نومبر میں آشیانہ ہاؤسنگ سوسائٹی کی تحقیقات میں یہ انکشاف ہوا تھا کہ وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کے پیراگون سوسائٹی سے براہ راست روابط ہیں۔

پنجاب لینڈ ڈویلپمنٹ کمپنی کے ذریعے آشیانہ اسکیم لانچ کی گئی تھی، مذکورہ اسکیم سے روابط کے الزام پرپی ٹی آئی نے پنجاب اسمبلی میں خواجہ سعد رفیق کو عہدے سے برطرف کرنے کیلئے قرار داد بھی جمع کرائی تھی۔

خیال رہے کہ 2012 میں میں آشیانہ ہاؤسنگ اسکیم کا آغاز ہوا، منصوبے کے مطابق پانچ سال میں پچاس ہزار گھر تعمیر کئے جانے تھے لیکن دعوے حقیقت میں تبدیل نہ ہو سکے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات  کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں