site
stats
بلوچستان

عبدالمالک بلوچ مستعفی: بلوچستان کی صوبائی کابینہ تحلیل ہوگئی

اسلام آباد : وزیر اعلٰی بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ مستعفٰی ہوگئے، بلوچستان کی صوبائی کابینہ تحلیل ہوگئی دوسری جانب ڈپٹی اسپیکربلوچستان اسمبلی میر عبدالقدوس بزنجو نے بھی استعفٰی دیدیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق بلوچستان میں وزیر اعلٰی اسپیکر اور ڈپٹی اسپیکر کے عہدے خا لی ہوگئے، ذرائع کے مطابق بلوچستان حکومت میں شامل اتحادی جماعتوں مسلم لیگ ن نیشنل پارٹی اور پشتونخوا میپ کے درمیان وزارتوں کی تقسیم اور اسپیکر کے انتخاب کے معاملے پر آج صبح اسلام آباد اتفاق ہوجانے کے بعد وزیر اعلٰی بلوچستان ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ اپنے عہدے سے مستعفٰی ہوگئے ہیں۔

انہوں نے اپنا استعفٰی گورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی کو پیش کیا جسے گورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی نے منظور کرلیا ہے جس کے بعد بلوچستان کابینہ تحلیل ہوگئی ہے۔

ذرائع کے مطابق مری معاہدے پر عمل در آمد کے بعد صرف وزارت اعلٰیٰ میں تبدیلی ہوگی ذرائع کے مطابق بلوچستان اسمبلی کا اجلاس آئندہ چوبیس گھنٹوں میں طلب کئے جانے کا امکان ہے جس میں پہلے اسپیکر بلوچستان اسمبلی کی خالی نشست پر انتخاب ہوگا جس کے بعد نئے قائد ایوان کا انتخاب عمل میں لایا جائیگا۔

ذرائع نے یہ بھی دعوٰی کیا ہے کہ آئندہ چوبیس گھنٹوں میں اجلاس طلب کئے جانے کے حوالے سے کچھ تکنیکی مسائل درپیش ہیں جنہیں دور کرنے کیلئے قانونی ماہرین سے مشاورت کی جارہی ہے جسے حتمی شکل دینے کے بعد اجلاس طلب کئے جانے کا فیصلہ کیا جائیگا۔

دوسری جانب بلوچستان اسمبلی کے ڈپٹی اسپیکر میر عبدالقدوس بزنجو بھی اپنے عہدے سے استعفٰی دے چکے ہیں اس معاملے پر جب ڈپٹی اسپیکر عبدالقدوس بزنجو سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے استعفٰی جمع کرائے جانے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ وہ ذاتی مصروفیات کی بنیاد پر مستعفیٰ ہوئے ہیں ۔

ذرائع نے دعوٰی کیا ہے کہا بلوچستان اسمبلی میں صوبے کی تاریخ میں پہلی مرتبہ خاتون رکن کو اسپیکر بلوچستان اسمبلی بنائے جانے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے جسکے لئے مسلم لیگ ن کی مرکزی قیادت نے مسلم لیگ ن کی رکن راحیلہ درانی کا نام کی منظوری دیدی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top